Skip to main content

Full text of "Khanqahe Arifia Par Etrazat Ka Jayeza"

See other formats


دڈەے٭ےەووواااعاووسکودوساودالسٰچوکےےعوأاکأاإسہه٘داژأأڈوواچڈوجاھاأدجوواأاًعچووادکھتدچأاڑچڈوالدادووجاًدوووسوجددواأکاجویسوجدأوأٛیدڑاسکأاچسھجھداودسواسکواچوٌچجے جح 
۰ 

تو 

ا 

ا 

٠ 

ا 

1 





7ے سر روا تک 


نانقاءمارڈیہ بد بے جانے وا لے 
از 
انھماشرگن مسباتی 
نشر 


٭ی 
یم 
٭م 


لان 


1 
1 
1 
1 
' 
' 
1 
1 
' 
' 
' 
' 
' 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
' 
' 
1 
' 
' 
' 
پ۹ 
ضے۔سس۔۔۔۔..سىصص-... ‏ .. ..س ‏ سس ب9 


تْ 
ق 
عقی خیب پیمکا 


کے سے میس غیرمظمر ین کی رای تام 
ا 


ان 
ین 


٭٭ 


منزلظر 





رآ خاف امام یل غی رم قلد ینگ تما بی تکامستلہ 
ری نکامد 


می نلم وت یک یوب نام 
ڑ 


ارس ت مضامشین 
ارک کال زام اور ںکابا: 


2 
ذ* 
سیا 
ح 
5 
ڑے- 





ہرعداوت کے دیعب تکی مدکی جائحقی ہے سوائے 
ال عداوت کے سک یادصر پرقائم 


جو 
نے 
2-2 
کے 
وو "" 
ہ١‏ ا 
٦‏ 
٦‏ 
!ڑ3 


_ے۔ 
0 


03 
12 


21 
31 
38 
48 


ٴ: 
: 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
1 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
' 
1 
' 
' 
' 
' 
' 
۱ 
۲ 
9 
مہہ ...سس سس ک 





دنہ راکتراضات الم 
خانقادمارفیہب سے جانے دالے 


7 ۰ 

بین |حست رانا تک یتفقیقسمت 

نوٹ : آج بندوستانی مس مان ج٘ سکرب س گن در پاے ء زعفرا یگمروہ نے جس الف 
حول بنایا سے لوس تک مر پرستی می سکنو رکھخا کے نام پیسلمانو ںکاف کیا جار پاہے۔اخلاقی کے 
خی کے بع رمسل ہ بر یت کا مظاہروکیا جار پاہے ادرحالی ہی یش راج مان کے واقیرے پپرے 
مل ککو ہلاگ ررکدد یا ہے۔اپیے عالات میںمسلمافوں پبرلازم ہو چا ےکمردہاپنے سارےسش رپ اور 
مکی امفلافات بپھ اکر الام کے نام پرمخحد ہوجا یں ۔الییے ناڑک عالات یل چندشرپپند 
رات فروع درف وع مسا لکو ن ےکریمماذآرا ہیں :چّ سکیا وجہ سے "لم اٹھانے پرگھورٹیں۔ 
تام جب اکیصوی کی دی کے ہندوتانی ملمانو کی جار رق ہوک یتو اس میں جمارای کک د 
مرت بھی دا ر ٹاک ہم نے ام تکوانتظار سے بین کی بھ یو رکش لکی۔ مر شمنوں 
کےشعوری وغیرشعوری آل ہکا ر رات نے ہم پ رت ہکا توذاتیات پرتملہ کے اخی طن ر ]ریش ء 
نی اورالز ام تر ای سے نے ہوئے ہم نے مکالماتی صورت ٹیل اق بات گی اوران کے لگاتے 
گے الزاما کی تقیقت سا نے رکددی۔ ایس اپے ال مرا ل توق جن ۔ 


تسا سس ارییکالز ام ورس لکاحب ات 

حقرت داگی اساام دا کی مو یکا وص بنا نخمات الاسرارشاَ ہوا 
سے کس میں مو ناذیشان اح مصباتی صاح بکا مق رمرٹٗھی شائل ہے۔اں 
ٹیش انہوں نے ا سکنا بکا تارف لی منظروٹیل منظر بیا نکر تے ہو ے 
رت دای اسلا مک یخخصیت کے چند پہلونو ںکوبھی جاک رکیا سے ۔ نخانقاہ 
عارفیہ کے ین نا دربن اس ہارمہ سے چن حا 27 ظا گل 
ابا ےش کے ہیں دیاش یک 9 


رہ رح تع روس مع جم رکم ےج رج وحم رمیج رءیج عححع جع رحوجع ریم رح رع رمع رم مھ جوم جم رص یس بح رج رکجم رھ جب مجع مجعجہ مع عم رم رص جصنبارعکج رص رح رمع میس میص جع رح رحو مج رکوس مد ری سی 77 


کک خ ۔ ہ۔ ہ ہہ در رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ کہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہ ہہ ہہ ہد ہہ رہ ہہ ہہ ہ رہہ ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہا ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ہک ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہد رہ ہہ ہہ ہہ ہج ح ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ کہ دہ ہہ کہ ہہ ہہک کک ہش شس کش رشں یں ٤‏ ہہ ہش ہگ 


خانقادعارفیے اختراضیا تک تحقیتل. ‏ . ...سے 2 ئ 

(۱) ”نو ضف ہیں گرا نک یتنلیر یش جودڈڑیں “( مقر ر نقرات 
الا راںضش:١١)‏ 

)٣(‏ حر تک ینخخصیت ایک ججبت سے شاو وی اڈ محرث دبادی 
کیاکی یتو ددسرکی طرف جب فق واقا کی با تی ےآ وھ بھی ٹاہ 
کوتاہ بی نکوتقلی رکی زی رس پوٹنی ہوئی سں ہوئی ہیں“ (مقرمہ 
ننفراتالاصرارک:٦)‏ 
ان دفوں اقتبا سک لک کے بیتاشدیاجا جا ےک : 
ا۔غانقا:ھارفی لی نی سے بیز ارے۔ 
۴۳۔اس می مقلد بن رات پرٹشن شف کیکئی ہے کاس میں علاء 
اولیا صا بصوفی اور انتا لہ سید الا ولیاء سند ا( انا ضورفحوٹ نم جیلائیء لام 
رای حضرت مال فان :شی ہندی اورسلطان الہ تحضر تخواجتین | 
الین ابی ری وخ دقمام مقلدی نکوکوتاہ ٹی نکہاگیاے-) 

۳٣۔اورا‏ نک لی پرجمودکالزام لگا گیا ے۔ 

تبیہ جک ایک دوبارات جو سے چقدسال پیل ایک صاحب 
نے ابق انقنظاریییلانے دال کاب می سککھا تھا۔ ا ب کک دی عپا رمق ںسگمرش 
ا کمردجی ہیں۔ خمانظاہکی طرف سے باد باداش با تک وضاح تکر نے کے بعد 
ٰ کب سادیہا تیں نس تام والزام ہیں ۔ بی ری ہمان ھ22 
٘ زمردارعلما بھی اس سللے بی یب رذ مہ دار کیا شبوت دیا سے اورش بیع تکو 
ایا لکیاے۔ا ران ہدایت عطافماۓ- ںا 


سم ہعومجم ےھ موس رجح رج محجچم رس رحوج رح رجیعرسمج می مت رصع رم مم رھ حم زم ھ حم ربیح رمع ربج مج مھت یحع مع میحر جع رع سم رح یحم بح روص ,رص رحب رحیحم رس میس رجح رحوس مج رحیس ىد رس سی 7 





ر_ 


ح رت رت ا ے ‏ ےت ا ہرٹت 


کگ ‏ ۔ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ کہ ہک ہہ ہہ ح ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ک ہہ رہ ہہ ہہ رہ ڈ۔ 


٦‏ < .۱ تہ .۳ دی دید درد ادج ہد ویج جٗود سے 
٦--..۔‏ 


خاقادفارفی اغترافیا انتا ...لے یف 
فواواا مق سام وا یک پچ ردکارے۔ہسا رر ےعلا دادلیا| 


لیا کی تفلی وک ری مکا یں دی ے۔ ںا کید یی جوڈیس ے لتق 
أعالات وااراریٴ یرود کنکگومال ۶ن 7ر٠‏ 

یں .یک ایی حفرت فاضل پر یلو ی سیت تا نین فان ےم مل 
ےاں کے پک سے ہیں۔ 

منصف ا رین خودفیم لک بی ںکہ بے اقتاس میں صا فکھا ےکہ 
مو تی ہیں ہنی امام نم ابوضنیض رس سر کے مقلد ہی ںتو اس می آقلیر 
ا یزار یکاصص یکہاں ےآ گیا ؟ 1 سےککاے : تگھرا نک یتفکیرمیش جھوڈیں 
ےد اس سے صاف بت چلا ےک وہ مقلرو ہیں گر انر سے مقل ہیں 
جیماکہ دہاببہ اختراض کرت ہیں ہبہ ان کا طریقہ ما عظام اور 
صوفیا ۓکرا مکی طرح ےک یفروئی مسائل میں عالات زماشہادرضرور تو 
ا عاجت کے وقت اپ ئن ارجس ان ے رارق 
ا پکتقلیرکی ضرورت وامیت کے س اق ر تق یق تآقلیربھی واج بوعالی ے۔ 
اس جم کوک افو اہ کچھیاا ن کا مطلب ےک مض رشن جات انا بجی نظا م٠‏ 
احوالِ مشا اورطر رت ترضون کےسا تح فقہواصول فنق ےکی نا آشنا ہیں ١‏ 
تحبائل عارفانہتکام نےر ہے ہیں - 

رآ گے دوسرے اقاس میں صا فککھا ےک :” گا وتاوٹی ںواقل یدک 


زیو یسوی ہو ہیں“ اج نک شا ہی ںتاو ںا کی 


رس رس صسع مع ھکمع موس نموم رحوحم رج رحیج رہ رمع رج رجھھ رج رمع رع رسح رم رہم ھ حم رھ میکح رکم رمبجع رمیحم رھت جحع رع رجحع رمع مسج سحی صب مز وداج کم رص یحم ریس حم رحجج رم ویج میحب جع رس سس 7 


ہ٠‎ ۱.۰.۰۰.۰7 


: 


یت تر ےس ےر ےت ۳ے ہے کے ےکغہےرژٹ 
ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہش کک ہہ رہ ۔ 


---.٦‏ ...۰.۱۰ کک 


ہک کک ہہ ہہ کک شڈ شش تح رہ رہ رہ ح ‏ ہر ڈگ 


اگ 


ا ج 


کچ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہک گک ‏ رہ رہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہک ہہ ہہ کہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ح ‏ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہد ۔ ‏ ہہ ہ۔ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


غانقا ماف راغ اضا تک ت تا سا 
مو ہکان ن7 رت کس 7 
سے ان تا ےکن بیس دز رفا دنن اننس ےزین نان نین 
ا ینا ین “کی فہرست می شال لکردیا۔اللراکہ رای جرات ےک ایک 
سی ہوک رعلا وفقہااورصوفیکرا مک کوتاہ بن“ تصمورکرے؟ ج بکوتاہ نو ںکی 
با تآٹیتواتےخود پر ال لکرتے ء اپنے ممحاص رعل کو تا کرت تکاس 
ا عہارت میں کوتا ہیں“ سے مرا دنم بھی ہیں١‏ | +گمرائس سےال نکیا شا نگم ہوٹی 
نظ[ تھی تو علاۓ سیرسروا سک کوتاہ نف سکر لیت ست 
یں رتا تومصیف سے گوجھ لیت لین پن یں بزرکگو ںکو زبرذتی 
اکرد ہیا مان دنا جا ایں؟ دی جائیں با یراب دارقارگین 7 
ا صر فآ ئن ردکھانے وانے ہیں- 
بھم ایےعقیدرے سے الل کی بناہ جات ہیں اودجھی ہہ جرا تنئیں 
مرج ےک علماء اولیا ہلا رحصوفیہاور انا لہ سر الا ولیاء سندرا تا حضورفحوثٹ 
نشم جیلانیء امام ر بای حضرت رد الف خائی تن اج ہندی اورسلطان 
ااہندتفخرتخو اج مین الد بن اتیبریی وخ رہ کوتاہ ٹین“ تصصورپھ یک ریں_ 
پھ می الاعلان ا با تکا وی کر تے بی کہ ہمارے بن رک صاحبان 
0 ۔ائسنتوجاعحت کے ہزرگان 


...۰.۰۰ کت 


ےت تک ٥ۃ‏ ٤ب‏ رر ر ‏ حر 


0ُ 


٠ 7د ےج‎ ٠-٠۰۳۷... ..2.-- 71 


ہک رر ہہ ہہ ہہ ہد ہہ جح ہ جہ ‏ ہہ ہر 


گ 


ام اایکمت سے برکی کین شا 


رہ رمع رص روس مع مجح مس وحم رمیج رحجم رحس رمیجعرحیجع رمع رویجع رم عم رع رع رح رج کم مھ صرح رجح ر۰بجع رمرحٹ جس حر جع رح رع مس رح رع حوص ۴ح ,صرح یحم ریس رمیع. رع رم رورس مج رحس کہ رسیس سی 7 


کت 


( نقاومارفہ براختراضات تنس سس لہ 
ب مم کک یکننک وکا غلاصہ ہے ے کہ خانقاہ کے مان حضرات ان 
ا عاروں سے جوالزامات لات ہیں و اننس منای نا ذ ٹیب ے جوخدان 
عباروں سے وا سک ہے۔ اد خانظا ھا خیروجا مع ھا مان سے برگاے۔ 
عباتو کا مطلب اوروشع 
ابآ یے ذرا ال عبار تکی متقیقق تکی طر فک کر تے ہیں اورا سکی 
مقر تع بن کرت یں: 
اس شش صاف ور ےہ اکیا ےک جولو گا وکوناہ ٹین ہیں مکی رکیفقیر 
ہیں ءفقراوراصول ڈیہ سے وا لک وین ٹکاشمتو یں رکتت اورج شی اصطا حا 
اصول ے واقنی ٹیس رکتاو تق نکیتقلیریش جح کک رےےگا_ 
ال جا تکواصصو لی اختپارےبکھنے کے لے ایلی حضرت فاقل پر یلو یکی 
اس عپارت پرغ ورک میں جو پالئل مذرکودہ پالاعار تک رح ے: 
اعلی حطرت کے ایک رسالہ ینام'”اَجلی الاعلام اَنْ الفعٰی مطلقاً 
علقو لالامام کے نمارف ین ےے؟ 
رسالہجلیل اس ام اتی نیم می سکرفنا می ریش قول لام 
برےاگرحصا این خلاف پرہوں اگ چخلاف رتا کید یاگیا 
ورظزں وف ریقال کر اقوھحئل گر 


٤ 


کہ ہہ ہد ح ہہ ہد رہ رہ ہہ ہ ہہ ہہ ح ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہد ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ جج رہ ہ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ کہ ہہ ہہ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہگ 
کہ ہ۔ ‏ ۔ ح ہہ و ہد ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہ جح جح ہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ کہ ہد ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رگ 


ل پرشقل کی مانا جا تا ودد رت یقت ول امام بی ہھتنا ےک“ 6 


رم سح رص روم رمع مو۱ کم موم رمیج رججم می رج رصع رج رمجچ رحمع رمع رمح مم رم دم جم رحس ریم رمع ر۳بھع رمیحم رجح حع جع رجح رع مع مھ رمع مس رع وص گج سح رحیحم ریس میس رج رح ویج می رحس مد رسیس سی 77 


ہج ۔۔ ہد ہد ہہ ک ہ ہہ ہہ ۔ ہد ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ح خ ‏ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہک رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ح رہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہ۔گڈ۔ 


7 


ج۱ سح مع رکوس رع ھجم رکم ےج رج رہیچم رمیج رءیج مجع رمع رجح رھ حم رع رص رم رج موم جم وس یح رع می رمرح رجھع جح مع جع یج رمع رععت جع نوم سد رص رحیح وم رمیص رجح مت می می یع رس سی 7 





ااں کے بحداعلی خر تکا قباس بیس اورفیم لک میں : 

”قول وبا التو نی بقو لک دوسیں ہیں(ا) قول صوری(٣)قول‏ 
طرریِسحزڑ لس وروق نےکر یکواورا گل وا:ارّل 
ضردری دہ سے یصے انل نے صراح اور شا طور پر کہا ہوگرو سی اییے 
موم کمن یں ا سکا ئل ونس حےضردری طور پر نگم برآمدمناے 
٠‏ ارد دا خوش می سکلا مک تاقوا سکا کلام ایاچی تاب حرضر ور 
ھرسوربی کےخلا بھی ہوتاےء ای صورت می سجھرصوری کے خلا ف تم 
ضروریی را دحا ہہوتا سے ییہا ںم کک ور یکو لن ا لکی الف ت ار 
بونتاےا وم صوری چوک حح ضر رلیطررچ لال مراف 
ا ا لکی پروی کہا جاتا ے؛ ملا زی نیک اورصا ات وعمرونے اپے 
ای یو ںکوص راس علام یز یرکف ارد اود ار باران کےسا ئا سم 
کی راربھی گی ءاوراس ےیک زمانہ پیل ان خدا کو ہی ش کی سی فان 
کیک ریھم ےعما فص تپ یکر چک تھا۔ پچ رو وں بدرز یفاص مان ہ وکیا 
اب !یمر کے خدام اس کےگررثابت شدبص عم پش لکرتے ہو 
زیدکی اتی مک تو حر کے ناف مان شارہوں کے او راگ را سکیانظی ترک کر 
دی ںو اطا سی کرک بس گے۔(فاوںی روب جر یر جلر:اگ:۱۰۹ء 
مع رکز ایل سنتبرکا ت‌رضا) 


ال عبارت ےصاف پت جانا ےک یہن اوقاتضرورت اور تا لکی 
وج سےاگرقول امام سے عدو لکیا جا ےتودرتقیقت تول امام بی پل سے نہ 
کی فخالفت۔ صلی ححضر تکی یی ںکردہ مال میں گا دکوناہ ٹین ب ربچ ےکا 


ث 


٦ 
۹۱ 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
. 
' 
' 
' 
1 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
. 
' 
۱ 
. 


ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ کہ کہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ ہہ ہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ڈگ 


(غافا ارتا زاشات ضتے) 7ت7 


رن وحن ھرکوعٹرکجل مد روح رطوحب رھٹ رد رجح رع جو حم جج نوج رج جم حرج ہم روح کو اح کیج رکید رو دح رح رح حا 7 


آ نے پا بار اس فلا مکی اطانح تکا ریا پا ےا کاطلفت؟5۶) 
خلت ےمان با لک یکوتاہ نی اور ےبصیرکی ے جوتقیقت اور اص لکو 


7 
ً1 
1 
1 
1 
۷ 
ا 


اتی کچھ پر اے۔ 
آ گے لی حفرت مز بیدفرماتے ہیں: 


”فالعم لبقولەالضروریالغیرالمنقو لعندھوالعم لبقولەلا 
الجمو دعلىالمائوزمزانفظہ ]نی ای صورت میس ان کےضروری 
لیے عفلمتہزگال سر 
یکپ تقو ل قول پرجمودہے۔(ایضائگ:+۱١)‏ 
اب گا ہے اصلی نضرت نی کہا نہوں نے پور جصورت میں ول امام 
کی مخالف نکر کو چھود ےکی رکیا سے اور کہ ائی نطخرت نے علماء 
اوایا صا بصوفی اور انا لہ سید الا ولیاء سز را انا ضورفحوٹ نشم جیلانیء تع 
رای -ضرتیچددالفخا ی ای ہنی اورسلطان الہ زجضرت خوا تن | 
الرین اتکببریی وی ہکن مقلد جا مز“ کیہ دیا کیا بہا بھی وبی جرات دکھا 
جا ےگیا؟ ابڈدا یی یمان ہلا کک۷رنے والی رات سےتھوظاوماممون رے_ 
ئمد بٹ ححضرت داگی اسلا مک یتقلمید می بھی وین سے بلک ہکا دکوتاہ 
ین کوٹ اوقا تتفلیدکی بی یں ٹوٹ ہوٹ یسوی ہولی ہیں ۔ا کی نیک 
ا شال بی ےکم ہثرو اک یس رین پر نماز کے جواز وعدم از پرکان' 


اف ےل گن حضرت تی ادامالڈرنلعلینا ۱۹۸۲ء وی رینپ 


ے کے غےےےتے ے ےک لے ہے ےت 


کک ہہ ہہ جک ہہ ہہ ہک ہش شش ہہ رہ ۔ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہش ہہ رہ ک ہہ رگ 


ہم 


کک ح ‏ کہ ۔ ح ہہ ہہ ہج کہ ڈ۔ 
یت رت اع ۳ ۶ تہ کے ےر ے۱ ۱ ےکیٹ 


اخاقامارنہ راع اضات برقت 


ر نین رکوحٹ رکل ہج رکح روح رجحٹ رجح رججھ رجح مجح رجح جح وھ ھجم عوھ وص روح رک مکح کیج ر۳ رکوجد 7ح رجح رح حا 7 


ماز کے جھاز کے تصرف قائل ہیں بلکہانس پر حا ل بھی ہیں کے 
ا میس مل میں کے سو شفواتسد 
ا ا اس ای نین پی یکیو زی مض پر جا مع اشرفیہمبارک می نجنا 

بت بعرمش ہوا۔ حتف ظا لی اتی الیل ے۔ 
اگ رس ز مان میں عل کی نظریس یہ با تآئی تو ون می سن شف کانتان 
ہناتے کیو ںک کس یک ڈگاہ دہاں کک نی سکع گی جہاں ححضرت دای 
اعلا مکی نظ نی ۔ج بآ کےکوتاہ بن ان پرتقلیخال فک الزام لا رے 


ہکہ ہہ 


5 


ک ہہ ہر ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ح ہہ رہ رہ ہہ ح ‏ ہ ہ ہں ہہ ہہ ۔ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ کہ ہہ ہہ ۔ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
کک ہ۔ہژ۔۔ 


0 


ا ہیں عالا ںکہآپ اصسل اوت یقت قلید پر لکرتے ہی قد اس زمانے کے 
ا ارے می ریا جاسکتاے ۔ائس عر کی ہتپ ایی دی ع اعت ہیں 


تہ ۔ ہے ہہ ہہ ہش 


ُ اج نکویچرڑھی بیا کیا جاےگا۔ 
تو ہہ سے اس عبار تکا اصسل مطلب جن میں جن ضکرم فرما ما می 
پہنان کیکوشش کرت ہیں۔ 


تت کے کت شس شت٦ت‏ ہۃےےے ”ہے ےہر ٹر 


ےت تسس سیت 





۷ی زاشات سا 


خمانقاد ار فیراورعلا یتو نکا مئل 
این میس الا حما نشار :۳ کی یعبارتگھ یا لک اتی ے: 
اگ رق فی ہی بت کہا ن تو نشی جا ہب بی ء ھی 

اور انی کے پچردکاروں میں کوئی اللہ کاولی سے 

ائیں؟ اکر ےت با کی و ی کی اقتاشں نماز گی ٤‏ 

ٹھیں؟ افو ںک ایک تی نما زق چو ڑسکتا ےگ ری انی ا 

صلیلی کی ؛قتہ ای ںک کنا ! تب ےک تم اپنے اصول کا 

دوسرو ںکو پابند بناتے ہو ج بکمہ ان کے پا بھی ق رن 

وسنت سے متابط اصول موجود ہیں جو نکی مبھی برقی کے 

ہو با یتم تضاد بیالی کے شکا رکیل ہو؟ زمان سے برلی 

نٹ ہواوزولل ‏ ہف لق ارد تن وو یواح گے ہے 

اورفھڑا اکا بطاا نکر ۓ کیا ففائ ی تق ی ین ےا 

زالززخیاع: ۴/ص:٢۳٣)‏ 

اس بھی بی تاٹ دی ےک یکویشت لکی ای ےکہعبار تبھ یتفلیر 
یزار یکی دحل ے۔ 

ا عبار تکو اتی طر حسجکھنے کے لی اختبار سے چندباتیں ذجن 
یس نکی ضرورت ے٠‏ ف9ؤ 


ہم سح تع روس رع ھجم رکم رج رج رھچم رج رءیج مع جھت جج رہج مل رمع رکو مم رھ دس زم وحم رح رع لح رمرح رجھت جح رمع رجح رھ رم مم رح حم رجح روص رع رص رح رمیح میس میص رع رجح رحیست یج رحس مد ری سی 77 


ہہ رت ہہ ہہ ہہ ہہ ہش رشح رہ رہ ہہ ہہ ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ رہہ ہہ ہگ 
کب ہک ۔ ہ ‏ ہہ ہد ہ۔۔ ہہ ح ہ ح ہہ ہک رہ ہہ ہر ہہ ہہ ہہ ہر ٤‏ ۔۔ ہہ ہہ ہد ۔ دہ ح ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ڈگ 


(فاظاہمارنےا 27 اضا تک ضفقت) )۴ 


زج جح جج جو رج رج جع جع جج جج وج جج چو ھ٣وح‏ رجھ جو 7وج 7ج جج جن 7ج رج :رھ دو رھ ۴ت وھ ھچ 


سی بات 
خی اور شافھی بللہ چاروں مسا کک (حخیء شاف می اور مکی ) 
اختاا فا جس فروگی مسمائل میں اخطاافات یں اور بہاخطا ات صرف 
مسا ال شرعیرےمیں ےعقا .902 عققییرے کے اعتبار سے سمارے 
مسا ا ںسجاحتف 
ووسری ہابت 
سمارے اکم چو لکہنیکء پر ہی گا راورنق کی شعار ے ۔اس لیے ان | 
ون می سیا مکاتحصب اورایک دوسرے س ارت ددور یکاتصو ری 
7ر راک ور ہے کے مات لک زعاب تک رت آو ریا ن مین | 
ا حب تک معاملہ ررککت ان لوگو ںکا ہہ اصول ٹاک : 
نپ مصیب ہیں امرکان خطا کے سا تاور ہمارے بد متقائل 
امام فنطا پر یں ا مرکا صصواب کے سا تھے“ 
یسری بات 
چاروں امہ کے مقلد ین پلنحصوش احناف وشوانع نیک لیر ےکک 
یں فروی مسائ لکی وج ےآ ہیل یں دست وگ یہاں ہے ہیں ءا نکا 
1 یتحصب او رجھگکڑااس مقام پرچ کا تھا ایک دوسرے سے سلام و 
' کلام اور پالکلینماز پڑھن تر کک گے تے۔ برای ک بھی داستان اور بہت 
ٰ ھی دل خر جارں ہے جس پرا نع شاء اللہ ری سال ف زار اک 
ست ای پر 5 


رص ےرمع رص رو رمع مع مم وحم رج رجہ ری رج رصع رج ریت رحمت رمع رس ہم رہم رص :وہ رح ریم مجع ۰بج مرح رع یح ۱ع یع مس سح رح ربص ہصح ,سم صرح ریس می رع رجح رویج مع رح ىد ریس سی 7 


ت ‏ کے ےر شر ے ےا ا رت رہ 
مت کے ےےے ہے رر 


+....2. ..."2.۱ .دج ہد د7 .نج ےد ےک 


٦ 


--.٦ 


حت ات تک ےت ےا رہ کر ت ےکا ے ہر 


ہہ ہہ ہک ہ ‏ ہہ ہہ دہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ رہ رگ 





٦ 
ر‎ 


اد عارث یراک اضا ہےرمرہتےے ے لے ا 
گی بات 


چاروں مسا ن ککا ایک دسر ےک اق ا ک بلق سے شر یکم ىہ سے 
امام اگ ایک دوسرے کے مسل فک رعای تکر ےو سب کے نز د یک 
مماز جائر ہے اصلی رت امام اتدرضافا اص بر یلو کی نےفر مات ہیں: 

”اگ رشافی طہارت ونماز یں فراال دارکان نرہ بش 

کی رعای تکرتتا ہے ال کے یچیچھنماز بلاکرابہت مان سے 

اکر نی کے جییے انفل اور اکر حال رعایت معلوم تہ ہو 

توی رن ےکزاہت کے ع ماف جا ار از عادت دم 

رما برتےمعلوم ہو وکا ہت ریرےا وراگرمعلوم ہوڑنا٢ک‏ 

ال نما ین رایت شرکی ٹوش یکا نکی انا جائنین ای 

کے جیما ز یسل بصورت اول ودوم میں ش یک ہہوجاۓے 

اورصورت سوم میں شیک نہ ہہوہ اور چہارم می سو نماز بی 

۱ ٹل سے ۔(فاوی رضوریمر مم جلر٦۷ص:۵۵۸)‏ 

صلی حضرتہنے اقق ا ک ےل سے چا رصورتیں ذکرکمیں / 

١۔اماماگ‏ فی مسا لکارعای تکرتا ہو بلا تر ڈدجانتڑے۔ 

٣۔‏ ععادت معلوم نہہوتوجھ یکرااہت کے سا تد جائخز ۔ 

۳۔عا مور پپردرعایت شکرتا ہو شحد برکگراہت کے سا تد جا 

* اص انل نمازجش رعایت نکر نےکاصھو جا مڑہیں_ 


سس سس سس شس سا 


وگ ۔ ہد ہ ہہ ہہ ہہ ہج ح ح ح ح ‏ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ رہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ کہ ہہ رہ ہہ ہد کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ د ‏ ہں ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ک خ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ رک جح ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہد ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ کہ ہہ ہ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ےہ ہگ 


خاقادعارفیہ ا۶ۃ اشات 


ک خ گ ‏ ۔۔ ہک ہہ ہہ ہہ ہش رہ ش ۰ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہر ج ہہ ہر ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ و ہ ہہ ہرگ 





جن ٤وج‏ رکم ۳وت رحب ر۶جن رص رمححد رجح رع رجوح مرح روج ر7ج یھ روس ہصح رکوع رم رم کیم ری کوھت جح رح رح <7 


بی روصورتوں ہیں ض ری تک واورا؟ ترروضورٹوں 2-2 کش ہو 
اویل بات 


اگ رکوئی بھبوری ٹن ںآ جاۓے ما :شب کی ایک می مسچد میس جع ہک نماز 
مضعقہوثی ہوہی جراعت حاضر ہو اور ٹیل امام شافتی المسک ہو یا شانضی 
اما مآکے بڑھجاۓ وا سی صورت ٹیل نما اد اکر لے 
عمبرالقن ب نشج بن سیا لور تونی ۸ ے٭ا رای کی عالم ہیںء 
انگ یکتاب می الاضی برای حضرت فاضل پر یلد یکا ایک عاشیںجی ے۔ 
آپ شیا لاضمرنی شرں ملتتن کی ال ری سککھت ہیں : 


”وفي الجواھر فالأحوط أن لا یصلي خلفەھذا إذا لم یعلم 
وأما إذاعلم أنه ینعصب ولم یتوضأمن فصدہ ونحوہ آو لم 
یغسل ثوبەمن المني أو لم یف رکە و تو ضأمن ماءمستعم لأو 
نجس آأو أشباھھا مما یفسد الصلاة عندنا لا یجوز اقتداؤہ 
فان تقدمواجاز لقولەعليه الصلاۃوالسلام صلواخلف کل 
بر وفاجر والفاسق إذاتعذر منعهتصلی الجمعة خلفہ وفي 
غیرھاینتقل إلی مسجد آخر وکان ابن عمروآنس رضي الله 
تعالی عنھما یصلیان الحمعة خلف الحجاج مع أنه کان 
أفسق أھل زمانه کمافی التبیین“(163/4) 

"مو اریں ےک ہاگ شافقی الیک کے تی 
رعای تکاعلم نہ ہوچواحتیاط انل کے پچغما نہ پڑھے۔اورجب 


معلوم ہوک اس نےتقصب سے ( یی قصدد ۱ف ی مقر کی نماز 


دا 


کر ۰ ۔ ہہ ہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہج رہ ہہ رہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ جج ہہ ح ہک ہد ہہ ہہ ک ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ۔ رہ ہہ ہہ ہگ 


شس ہس ہص مسا سس ےب اگ 





اقاہ 
ہے مگ 
یوک کیاء پامنی گن کے بح دکپنڑےکودمو انیس پامنیکوکھرج 
کر پچ یئانڑیں, ا ستتمل ءٹس یا بے پانی سے وضوکیاجس سے 
ہمارے(احاف کے ) نزدریک جضوفوٹ جا تا تو ایےے اما مکی 
اقرایں نماز بڑھنا جانزنڑیں لان اگ اتنس (جقتص بکی 
فیاد پر ہذکودہاتمال انام دبا ہو )نماز پڑھانے کے لیے کے 
بڑھ جا تو اققراکرنا جائز سے ںکیو کہ تضور لپیا کی 
صدیث ہے: ہرخیک دب کے تی نماز پنڑ لد۔ راس وفت سے 
جب ا لکور وکنا متتزر ہوو جع کی نماز اداکر نے بائی نمازوں 
کے لیے دوسرکی مسجبد لے جاۓے ۔حخرت ا گھمراورتضریت الس 
رڑی ال ہما حجاع کے یی نماز اداکرتے تے عالما لک جا 
اپنے ز مان کا سب سے بڑافای تھا۔ جب این میس سے“ 
یہاں رییی معلوم ہوا ری ز مان می ستفی شاف یکا اختلاف او تحصب 
اس قد رھک روہ اپنے مخالف مسلک کے مقلدی نمازخرا بک نے کے لے | 
ان لو چوک ررعای تی نکرہت تھا۔ا یندا ریعحببیت سےتفوفافرماے _ 
امام این الوال زی صاحب شر ھا وی ای ق کاب رسلا یف یم 
الا اء ہا الف می س کھت ہی ںک : 
”امام ابوپیسف رن الشدعلیہ نے خلیہ پارو نکود بی ھا کہ 
ل انہوں نے چچنلکوانے کے بعد وضو سیے بی رٹماز یڑ ھانے کے ش9 


رہ رص تع روس جح و رمع رج رج رح رمیج رحیج مجع رحس رحیبع جع روص رمع رکص ری روصم مس یجس رع حسم مرحم رجح مج مھح جع رھ رص رعسعحی سرع رک سح رحیھ میس رحیص جج رم وت یج مھ یع رس سی 77 


ح نت کت ا سے ے کک رر رٹ 


ہرگ ح ح ہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہک ہہ ہ ہہ ہہ ہہ رک ج ہہ ہہ ک رہ رح ح ہہ ح ‏ ہہ رہ ہہ ہہ ۔ ہد ہہ ہہ ہہ ہر رہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ۔ کہ ہہ ہہ ہہ ۔ رہ ہ ہہ ہرگ 


سرت رت رگ تے ۶ت ۰ہ ہے ۲ےک ۰ے ےہتہٹ ٹر 


(ناقامارنہ راخراضات قت١..9.9.9.س.9‏ ...لیگ 3 
لیے کے بڑھھ گے اورامام ابو وسف نے ان کے تینمازپڑھ 8 
لی ۔لوگوں نے و پچ اک ہآپ کے نذد یتو چچونالگا نے کے بعد 
و وک رن ضروربی ےء بی رجح یآپ نے کی ےنماز پڑ لی ؟جواب 
دبا کہ خلیف کی مخالش تک نا بزقغرف ان کان نے سا 
وی“ '(۳۲۰۳۰۳) 

یہاں اکر جآ پ نے بوچ رمجبوریی اورغلیضہ کے خلاف شک ےک وجہ 

ےنمانزاداکی بین ال سے امن تو یت پل گیا کہاگ امام رعایت نیجھی 

کرےج گی نمازہوجا ۓگا۔ 

چٹ ی جات 

می جا تکواگر اس کے سیاقی وسباقی سے ہم فک دیکھا جا ےت ہہ 

و پیداکیاجاسکتا سے۔شثال کےطور پراگرق رآ یپاک 

گی آ ینکر یہ :نل تَفربوا الا (نماز کے فریب مت م 7 

ادن شکاڑیی*( ن ےکی حالت میس )سے ال کک رسےکوئی نٹ پر سے 


6 


کہ :اید نے نماز کےقریب جانے بھی عمکیا ہے اذا مز بڑھنا عنا تام 
ےت بقین ای نس خی ہوگا۔ 
اسی رب ناقل نے الاحما نکیا لکرددعپار تکواس کےسیاقی یۓ 
ہن اک ایک ا سی پیداکھ رن ےک یکوش کی سے۔منقولعبارت سے 
صافطور پلگکھاے: 


رع ےرس رسص رھ مع مم مم جوم رمیس رججم میس رج رح رمع رویجع رمع رع رمع ری رص وم رص رح رجح ر۰بحع رمیح جستھ یح رع رمع رع مم رمع رح بح فرص ز۴ج ,رص رح رحیحم رحیصم میس رع رح میس مج رحس مھ ریس سی 77 


غ٤‎ 


پیج 


ہک ۔ ‏ ۔ ۔۔۔ ہد ہد ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہد کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
کک خ ہ ۔ح ح ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہدرک ہہ ہہ ہہ ہد ہر ہہ ہہ رں ہہ ہہ ہہ دہ رہ _۔۔۔ ۔ ‏ ہہ ہہک رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہج ہہ ہہ رہ ڈگ 


2 


فا قادعارف اخ تراضات کات یت ...لی کا 
ضرورت وحاجت کے وفت دوسرے امام کےٹول پر 
یکر ارم ن7 ادن ےک ال 

مازنج یی امام انہب ے؟'(الاصان:٣كض:۳٣)‏ 
جھم‌او پر یمعلومکر کے ہی ںکبضرورت وحاجت کے وقت انسان اٹ 
امام کے یی نماز پڈ سا ہے۔تو الاحسا نکی عبار تکو اس کے سیاقی و 
سباقی کے مات ملاکرد ےر ہوا ےک نات فی انم ا ننس کے 
اش یومفدسل سا 

ساتوی بات 

یا سا قکی رب اگرنی با تکو ال ےکنا ظ انت 
(60106)) سے ہن اک دریکھا جاۓ ہب بھی معن 7" 
اق رآن پا کک مہ تیآ غ نل اک زان نک شا موی ہے نار 
دریھا جا ےتو بہت بی غلطمعفی پیدا ہوجاتا سے۔امی لیے علوم الظقرآن میں 

شمالن نزو لکو باضاب ایک نکی صورت میں پڑھایاجااے- 

الاا نکی منقول عبارت کے تی اصسل دا قعہ یہ ےکچ زمانے 
داگی اسلام کے برافادات مع ہو ئ٤‏ اس وق تکی لااو رمص کل 
سے معلوم ہواکہ وہاں پر شالی جند ےی لب انی امام کے تییے ما زنیں 
پڑت اور عام طور پر جماععت تر ککرتے ہیں۔(ددورغ برگرون راوگی ی۷( 


ا داگیاسلا ملک پذرکور ہنضنگ وکنا ظ میں بھی دبھنا جا بیے۔ 


۳ 


ہک ہہ ۔ ہد ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہد رہ ا ہہ ہد ہہ ہد رہ ح رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ری ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہ ہہ ہ ہہ ہہ ہگ 


ظ7 


ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہج رہ ہہ ہہ ہگ 


١ 
کب رح ح  ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ۔ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہگ‎ 


۱ 7, پ. "َ 
مال ماس سے یاددی مد تک ٹیم حاص٢‏ لک رکے جات ہیں۔ہہں | 
کی مسا دی اگ شی اام ہو توددویں کےا ظا مکی طرف مقر( 
ہدتے ہیں ین ا نکو ہٹانے پرقادیھ ایس ہیں ؛السیصورت میس امام کے | 
ِ ارے می معلوم سےا کیو واا فک رعایتکرتے ہیں پاچ موا 
جا عت تر کک نا ہمارے اس قولل کے منافی ‏ ےک شاف یھی بر ہیں اور 
1 اثیسنت سے ہیں ۔عالا لک ال بکمان می ےک شوا نع اپیے مقام پر ایا 
ما مکی نکر یں کے جو اا فک بھیا رعای تک تے ہوں سای صورت 
میں اہم جماعحت تر کک نیا شواع سے ج پیا زپڑ سے سےل ماگ 
ا میں کت ا نا قی شیک طرف اشار :کر اے۔ 

آ گے حفرتداگی اسلام نے فرمایا: 

فی اون کے افناا یکو یک کی وت سے اک 

شاتی :تن یفن این اور آی کی شاف یکی ا می ں مز دنو 

کرت خواہامام اپنے ز مان کا ٣س‏ ٹسوشل اگیوں دہو؟ 

ا کک ایک تی یا شاف یکووت اضف مکی اقترا می نماز ادا ے 

کا موخح مسرآأ ےت وک اکر ےگا؟ ا نکی اقیق ای نما زاداکر نے 

کواپقی سحادت مندکی جان گا با ہہ کی ےک اک ہآ پکیخوشیت قیول 

می لی یا شی ہوں اورآپ مہہ شی ہیں اس لیے پکی 
7 اقر اش میری نماز+وگی؟“(ا(احان ٣:‏ كض:۳٣)‏ ںا 


رع ےرسح رح روم رمع مرکم حجحم رج رمحیجم می رج جع رجح رعیج رم عم رع رع رم رم رص جم رحس رہوج رج ر۰بھع رمیحم رجح جح رجح رجح رح مع مع مس رصن رسک ,سی رج رحی مج رع رع رمیح می رس میحد ری سی 77 


بجعت 


جہ یت ہریت 


٦ 


ہج ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ رہ ہک ہہ ہ ہہ کہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہج حر رہ 


ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ کک ح کک ہد ہہ ہہ ہہ ہش ہہ ہہ ح ‏ ہر رڈ 


اقاہ 73 مارنے رفی یماخ راضا تک انف یقت ...لے ۹ 
پیر ا بین بپڑھاک یز مانے می فی شافی امنا: ٌََ 
قدر بڑھھ ہہوئے ےہایک امام دوسر ےکی ماخ را بکمر نے کے لیے 
اع نوچ ھکر رای ٹک سکرتتا تھا .کی مور اک شی الد تھا ی عنہ 
ا دسر ے ال کے ولیوں علق سے ریلصو رجح یکیا اصکتا ےک وولخصب 
ےن نا نک رشن گے تو ای ٣ن‏ وت ان القاسر- 
اور جب سارے اہب میں اید کے و ی ہوسک ڈی ںتو پچ ری خیا لکیوں 
ا یسر ہتائہرشانتی ماما کاو یتو ہھکنا ے؟ 
اب ذرامنقولہ اقتباس پ رگج فو رک ری اورآپ بی بای کہ اس میں 
تقلی زار کی با تکہاں سے پیر ہوگئ؟ عالا ںکراس مھ رت وضلی و شی 
گی بات پل رپی ے اوران دونو کا شا رمقلد راہب ٹیل ہوا ے ذَ 
ازنغ کے لد لوفا ز کے ٹر وواجبا تگی رعایت کے سا تج ایا 
دفسر ےکی اقیق ای نماز اداکرکی چیہ بش رحآو ربا درست وت کے 
١‏ یدجایت شاف یکرلی کوٹ دنو سکتن یی خمازشافق ےجنس | 
زاون کے پاوجود اگ رکوئی اثّڑا گر بی نکر ےتوپ ینا نذا یمن ی 
ہے۔کیو ںکآپ ذبان سے الن س بک وآپ بی کے یں اورٹ-]ً نماز 
بڑ کو براجانۓ ہی ںتو نذا تی بیتو ہوا؟ 
پر کردورحاض ریش برا ہب ار عہ کے مقل دی نکی ا ایک سرےے | 


دی اورنادا یمطاف تکی عدت کپٹی ہوئی سے جی اعت نم شی 


رح ترسح سد اص دنس درم ھح رحس مج رعجہم مھ رکیجھ سوحح ھی یبد رعص رمع رہم مو یھ ھ یھ حیسی رس ری یس یس می یت زجع رجح رمیح رحس رصع ری رحس می رحس ید رس سیس 7 


7 


سے ےت رک ا ہے ےر ہہ 
ہد ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رح ہہ ہہ 


۱ 


ہک ہہ 


ہک ہہ 


ہہ ہد ہہ 


حم 
ٴػصوججچ٭تج٭جومووپج‫و"'‫صهصحجججچووجحجچجوسمشوو٭حچجً>_كج بے 


و ہے ا ری ۰ ہے ےگ کو ہر ٹر 


خاقاومارنی ہر ثاشات تق ..  .‏ لی ٣٢‏ ا 


| اور مات یدک کے درمیان ابت اش یداختلافر بااورایک دسرے ٹس تنی) 
َٗ اکر مسق تکرتے رسے۔ ای رع آ رنج یہ ماحولی سے کان چاروں! 
۱ رو ےئھکر تھی ادا ےکا 
٘ ا سے لبج کسی حال میں ددسرےذہب پل لکرنا جائزنگییں۔ خائ صکرشفحض 
احاف ال با تکوضقیت ے عمارح ہونا نصو رکرۓے یں خرت با 
اسلام ا سے ماحول سے بیزارنظظ رآتے ہیں اورفرماتے ہی ںکہہلی ںک | 
دور یا تم ہہوٹی چاہےنفرقو ںکی دیوارک راک یتو ںکوفروغ دینا چایے اور 
ہا لککشٴ ریبعت نے اجازت دی ےا ےلیک دوس ےکی اققہ ایی نمازیں بھی 
اداکرٹی جا ےا اک ردود یا تح ہوں۔ 

لن نسوں اتی صا فعبار تکویگی دا دا :نکر کہا جا ا ےا ور 
ازرنیظر ہے زارکی خاہت تکرنے 1 2 7 عارڑی ے سے بللہاسے نمیر 
٘ ا مقلدیت سے جوڑا جار ہا ے۔وال بی ےک کیا ضرورت کے وقت یا ایک 
7 7 سی ا 
ا یرمقلریت ے؟ا اگ رین ایسا کت ہی ںتو انی اعت اخ کرنے سے بط | 
اف یکتابو کامطا رکرکے یمم وسحت دیناچا ہے۔ 

خلاصہ کہ ذکودہحبارت پر یا وپ کی فیاد پراعتات کیا جار اے 
جان بو چوک رغیرمقللدیت سے جوڑن ےک یکوش کی جاردی ے- 


رر ۸۴ ۱ 


٦ت‏ کے 
کک کہ 


ہے ہہ ہہ 
۰.0.۹ .. ...ند نہ ہہ د7 ہج .ےآ ی‫ ھدآ ...تد ےد ےا ےد ےکچ ےت 


٢.۱.2.۰... ۰2.٦ 


چی 


رت رت تس ےت نے ےچ ےا کک کر رر 


ہک ح ہہ ہہ ہ ہہ جح رہ۔ڈ ۔ 


خاقادفارفی اغتراضا تک اضق تا .لح ا 

نانقاہ مارفی اور رآ ناف اما امہ (٠‏ 
انا مار مامت مار ع۶ حاض کا :ا عم بگری اتیج , 

ری سال ادارہ سے جو ایک شش نکی ضل اختیا رک چا کے سان 
لت ا کی تی مکی اورثانی اساذ وکی نر یم ہمہ ے 
وت * ٭* کے سز ائدعطا کی خدمت یل مصروفٹٴل رخقی سے۔ سب سے 
انم جات بد ےکہ * ٢‏ رر ےڑا رینم مین ورای لٹ را کیم | 
2 فی یڑ یک لی بتقتقی اون نیقی خرمات سے لے موتت 586| 
۱ جا ری موجوورتی ے اورآصوف ملق فی ریم متون ؛خطوطات اور 
ٰ ا اخطات پرشقیق برع اور جم شرع کےساتد مود دنت یھی ان ےقوم| 
ا سکیا ےرہگ ےج مر رت گلاان وا ای ے, 
نام قائل ذک ہیں شی کین کی یم تصوف 7ے 
‫ ہی اورگکری عیلہ سمالنامہ' الاحمان(اردد)“ بای ہے۔ اس وقت 
' ہندوپاک ٹل ارد زہان یسا پا ےکاضفتی مل ووجھی آصوف ے 
ا وضو پر نا پیر ے انس گے کے اب کک سمات شمارے علا و داْشوران 
٘ ےا ول تکی لحاس کر یں ود سک آٹھواں ارہ پرٹنں 
َْ ا جا واے۔ 

نوہس سن 

زبر دی تمنازع بنا ما جار اے 


تم ۔ص رمع رمع مجح مم .حم رج رحیجمرمیج رج رجح جع رج جم رصع رہم رم کم ھجم رھ رحس یمج رجح بجع رمیح رت حر جع رمیح رع مم رمع مجح بح رصع ,صرح رمیحم رحیص میس جع رم رحیس مج رحس مھ رسس سی 77 


ظ7 


ہہ ح۔ ‏ ہہ ہد ہہ ہہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہش 


×ے.ے. 
یت تر سس ععتہے تے ےت ےے ا ےت ےر 


.۰....--.-.٦‏ .۱۷۱2.۰۱ ۰د حا 


کہ کہ ہہ کک کک 


کاو 


: 


٠.۰. ---. 7‏ ...۱د ھی ند ےن دادن اد ددےدجے ےجو کہہے 


۱-٠.۷... ۰ 





ج7 7ز 8 ۰ 
72222۳۷۵2 ا ات خلف امام کے قائل صرف جع 
اس لیے تھےکہان کے پان حد یشک یہاں انہوں نےقول امام 
پگ کرنے سے یادہ تقو لی رسول پش لک رن ےکخیا لکیااوری 
معول اس سلملے می ںآ جکبھی چلا آرہا سے صونی علیم ہوتا سے 
مفاص رش ربعت پا سک ثاہ ہوٹی ہے وعاجت ے 
مت یاروعا یکن فک ہنیاد ریمض مال میں مفردہوتے ہیں 
ا کے پاوچجودمقلددی بہوتے ہیں ۔(الاحسمان :ا گ:۵۰۶٥)‏ 
مرن اس عمارت سے چیب وخ ری بش لمکا لکرخانقاہ عار فیا 
بدنا مرن ےکی اکا مکوشن لکرتے ہی ںکہ ىہ متقلدی نکی تو بین ہے ائ مکی 
گستافی ہے غیرد وفی رد جن ےکس ںکوکی لینا ایس سے بی یباتک 
سی سے تع 
7ار نس ان تا ہم بہت سے سادولوں جو صور تعا لے 
واتنف ہونا جا ہیں ان کے لیے چند با ہیں ضورع ت کر نا چاڑیں کے 
ہے سس سیت 
ا۔م لیف رت خلفِ اما مکیا ہے؟ اراس کے اکا مکیا ہاں؟ 
۴۔ اس سک کا خا ناد عارفیر ےکا اق ے؟ 
دا لکاج اب 
0 ات غلف اما مکا مطلب ہہ ےکم نمی امام کے جم سور 


فا تک حلاوت/ن۔ ںا 


ہہ تہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ کہہے ہش ےحہحش شش شش شر 


ح ات تس ےر ےے ے ٣شت‏ ہت 


ہہ ہک ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ح ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ج ہر ڈگ 


ات 
ہج کہ رح رہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ دہ ہہ دہ ہہ ہز ہہ ہہ ںی ہہ ڈگ 


ز۳ 


لی مل ہائحمہار بد کے ما بی لف فیرے۔ ۱ 

لالہ اور حابلہ کے نزدیک مقندی کے لیے ق رآم کر ناجائ سے 
واج یں وا ہج ری نماز ہو یاسری- 

٭غرخغ کےنز کیک ری ہو یاجمرکی سور فا تک ظلادت اجب ے- 

0ھ فکااس مک بیس اختلاف ہے۔ اکٹ احناف کے نز دی کم 
بی ےک فندکی کے لیتق رآ تک نا جائنجیں۔ 

0 عم اوراما مجر سے اس سلللے میس دواقوال بہیں۔ یی ےٹول کے 
مطالاشظش متناز یکا سور فا2 پڑعنانرواجب ےشست -اور دم ول کے ا 
1 ج- 7 +۰ ھی + 
امطاق نمازوں میں سور فاتہ پڑھناواجب سے شمی ا وق مضمون ان 
شا ءالیڈرگڑبھی۔ 

ییہاں دوفرلٹی ہہوئۓ ایک پڑ ھن ےش حکمرنے وانے اوردوسرے 
پڑھناواج بن وانے- 


فقاو لی دنیل 


ہولوک سورہ فاخمہ پڑ ھن سے کرت نہیں ا کا کنا ری ےک جب 
قمرآن پڑھاجا تو سںکوفورسے سزناواجب ے۔ اڈ دتعال یکا ارشادے : 





أرخاقاد اریہ راع اشات 


5 


جک ۔ دہ ہہ ہہ رر ہہ ہک ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہگ ہہ ہہ ہج 
تک کے ےت ٣‏ ےت تع ہر 


ہک ہگ 


٦.‏ 7 7 ضس 2 ہے 2 ہے ووارظ 
وَاٰذًا قُرۃ الْقَرَآن فَاسْتَیعُوأ لَهُ وَأَنصِٹُوأً لَعَلکۂ 


رر تُرَعَتویَ(۶۱۱اف+204:7) ںا 


رہم رح تم روس ہلجم دع روم رح رج رچچم رجح رءیج مجح جج رج حم رمع رح ریس رم ھ وص زم وص یی رح یسب رکم رھت وحع میحر میحح رع مم رحح سم بح سکع دص رص رمیم حیص میس رجع حم رحوج مج رحس مع ری سی 7 


٠2۱.۱۰.۰٠.۰۰... ٦‏ ج1 ٠أ‏ :ظ۳ یر جج دض درد جھ داد ےد جس ےدأددکوااداجچوودےددأ چو 
ہہک ۔۔ ۔ ‏ ہہ ۔ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہج ح ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ژہ ر ٤‏ ہہ ح ۔ ہگ 


- ۱ ٥تت‏ ہت کل 
٠‏ اق ط 7 0 ۰ اکر 
چوس اور نے فراع رجا جا ۓ لوت لو سے تا ٢ر3‏ 


اورخاممو در اکر وت اکم رات مکیاجائے۔ 





اورعر یث بُل ے: 
من کان لہ امام فقر ائۃالامام لف رأة (سلن ان ماج ) 
تر جمہ :اما مکی قرات مقند یک یق رآت ے۔ 


لپزا جب اما ق رآ تکردہا ہووثرآن کے ممطائئی آں وفنت خا موی 
انم ہےءسا دی اما مکی ق رآ ت نی کے لییےکاکی سے۔ 


فرق خان یی یل 

فا واج ب نے وا لے اکنا ےبرح بیث میں ے : 

من صلی صلوةلمیقرافیھابامالقرآنفھی خداجٹلاٹا 
غیرقام ( جج ,149:1) 

نے ایی نمازی۔ڑی جس میس ا شہ یی ذدغماز :نس 
ہے تن بارفم یھ ئیں۔ 
انداچا امام کے تی پڑت پا تا سور ة فاتجہ پڑھنالا زی ے۔ 

عو شا کارتف 


رر صوفیک رام فقیہ ہوتے ہیں اورخطلف فی مسمائل میں اعیاط والے لیا 


ہے ےے ہے ہے جج رمع ر جع رممبع رع رمع رع رج رمع رھ کم نوم رص رمبح رمع رح رمع رع مجح مع ممحج جع رہمع عم ہت صم جع کم نع کم رص رحیحم روم بح جج ھجب عیجت جح یع رس میس 7 


کخ ۔ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ کہ کہ ہہ رہ دہ ہک ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ وہ ہہ ہد ک ح ہہ ہہ ہہ ا ہ۔ ہہ ہہ ہہ ہرگ 
کک ۔ ‏ ۔۔ ہہ دہج ح ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہس ہہ رہ ہد ہہ ح رہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہک ہہ ہہ ہہ ہرگ 





اناو 
ہے نا چا نلم ص وف کرام نے دیو فرب کے 
دلا لکنجزق دتنے ہو ایک ٹے کاراست الا ے۔ 
”ا نکاکجناےکہ چو ںکیق رآ نکی حلادت کے وقت اے 
سفنا واجب سے اوراما مکی ق رآت قنقدی کے لی ےکاٹی سے 
اس لیے ہر نمازوں یل جب امام زور ےق رآ تکرے 
تو اس وفت خامول رےطلاوت تہ ےے تا یف لن آوکی 
کی دتل پرکل ہوجائے۔ اورسری نمازوں یں جب امام 
آہتہ حلاو تکررے تو اں وت مفنزی تھی خاوت 
ےت ای ضر ٹر بت کےوانل روا ےن 
لاج جون رسنت ال دعلی(1047-ھ-1130ھ )نےففیراحی ٹژش 
کیا ے: 


فان رایت الطائفة الصوفیة والمشائخین تراهم 
یستحسنون قراة الفاتحة للموتم کما استحسنه 
محمد ایضااحتیاطاًفیماروی عنەانتھی۔ 

یی اکر جع توف اورم نین نز یکو دیو گن یں معلوم 
ہوک بیلیک ام کے تاد پڑ نک خسن بزاتے ے۔ 
ر حیی اک۔امام تج مت ال علی اعتاطاا مان کےقائل جے۔ 5 


رہم سح تح روس اع وم رکم ےو رج رحچحم رمیج رمیج مح رھ مجع رجح رم مرکو ری رہ دص زم مس رس رجح یسب رمیم مھت جح می ریحع رح سح رصع سس جع ھ ورمع مرحم رحیص حیسم رج رجح رویتر مج رحس یح ری سی ر7 


کک ۔ ‏ دہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ رہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ دہ کہ ہہ ہد ہہ ہہ ہ ‏ ہہ رہ ح ‏ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ہہ ہ' جح ہہ ح ہک رہ ہہ رہ ہہ کک ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ ںی ک ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ رہ ہد رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ۔ہ ہہ ہہ ہ ہہ ہرگ 


غاقاومارنہ جج مم سیت ا 

صونلرام اضوان ضرع لوا ٹر برالریی(589ی-666ھ 
خواج ظا الد ین ایا (636ھ-725ھ ) اورصاحب مع السلوک ٍ 
أ سعداللد بن رآ بادیی قریسسرہ(922ھ )سیت مشار سکملہچش فو يک 
ای پل ءداے۔ 

اخلا تفآ ع بالیس 

یہاں یہ با گی ذہلن شس رہنی چابے کہ ہندوستان شی وہای کا 
أ ف روغ شا اس اشیل دبلویی (1831 / 1247ھ ) سے ہوا۔انئیں کے بعد 
دبابیدتحموںل دو بندگی اورائل حد بیث میں ہٹ گے 'آپ انچھی طر بح خور 
کرک ہی ںکہ بی دا پایوں ا خی رمقلدری نکانییں سے بللہائم ار بعراو ور 
٘ تہائۓ اح فکا منلہ سے کیو ںک فی رمقلدی نتو تی ہو بی صدکی اج ری 
کے پیدادار یں ج بکہ بی م لہ دوسرکی صدی لف فہ چلا آ انپاے۔ 
اور متلہاحاف کے ہا بھی شش رو سےمطلف فیدر ہا ہے۔ ای لیے نا یز 
نے ان بن رگوں کے :ا موں کے سا اا نکی مار "0+0۳5 
ا کردیاےتاکرفارین زان ےکا خی نکیکیں ۔ا بآتے ہیں دوسرے 
ا صوا لک ططر فک ات ےکا خانقا: عارفیےکراصلقی ے؟ 


دوسرےموا لی کا: اب 


نف کرد ہا تاس مول نا جیب الیک بھی مصباتی کے ایک شتققی مقالہ 
0011 علیہ نظا می یفوب نی پور: تار اورکارناے' ے ا 


رص سح رھ رمع مو روم وحم رج رجہ میس رج رح رجح رعیج رم جع رع رع روح رکم رص موم ھحص رح جع ۳بح ریم رجھح رجح رمع رمیح رع مم مم رح مجح بح یوعد نع رص رص رح ریس میس رحبت مب میس یمیس ید رس سی 7 


کل ہد ہہ ہہ رہ جک ہہ ہہ ہہ ہہ ہد رہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہرگ 


...۷ک 


رے() ح, . ...۔ گے ےج ج ہ٤غ‏ ) ےج3 م) م۴. .. ۔ ہے 
×ے--.-.. 


...۱2.۰۱2 ج2 جح دا[ کے نے 





پعطہ راع اضات ا فی 1 0 
سے فی شرف وکا تمہ سے جاں نیک بہت ھا 
ایس خانقاو ”فقاو فو ہے مولانا جیب ال نمی صاح بک مقالہ 
ای خانقاہکی مرن شقمل ہے نانقا کی جار ادرکارناے پرکیاککا| 
جاسکما ہے ہہ روک اندز ہک رکا ہے۔ چنا نچ ول نا جیب الین صاحب نے 
اس خانقا ہیی جار اورسلا٦ل‏ کے کر کے بعر ےکنوان پاندعا:”مشاً 
خانقاء مفو پکااطنقادی ,نشی وعرسف رت7 ضف پرے 
اخننا دک یکا ذک رذ یل کے الف ظا می ںسکیا: 
اخنقادکی مسلک: ص فی پرثریف کے مشا کی تفنیفات 

واثوال واعمالل سے معلوم بوتا ےکک عقا دیس ما تریدی تھے 

*اورآ بھی سادا نمفی پورعقا نیس ای امام کے مد ہیں ج نکی 

تقل یق یبا ہندوستا نکی اکٹ مآ بادییکرکی ہے۔ 

سلسملیفوبہ کے پا پی مو شا فی ق درس سر ہدک یداورآپ 

کے خایفہ نے خاشہ نیم صونی رت میرپ الوحربلگ رای ریس رہ 

نے اپقی ماىہ نا زتصفیف تح سزائل ٹیس خعقا مر و معاملات اور 

ماما تکو ہابت وضاحت کے ساتج ھخھ ری کرد باے مس 2 

مطالییہ ے معلوم ہوا ےک سمل صفوبہ کے صوفی ہکا عقیرہ رض 

وخروج سے الک راہ اعتترالی کے مطا ای دای خقبیرہ ہے جوزمانشرے 

ال سنت و جماعع تک چا آر پاے اور ج بھی بی عخقبیرہ سے۔ جیما 

کہ اس سلسلہ کے قریب زمانہ کے مشبورعالم وصوئٰی حضرت 
رر معز یز ائلدشاہ دیس مرہک یقاب عق مد العزیے“ کے مطا لع سے ںا 


رہم سم تع رس مع وم مجع رج رج رح رمیج رىیج در معع رھ جج رھ جج رمع رج مم رم ھجم رم وم یم ریم لی رکم رھت وع رمع ر۰یحع جع رم مع رع یح صن راوموس رح رمیح میس رمیعب جع رح مت یع رح یع رک سی 77 


7.-۰۳2۰ ۰0ک دح 
7....-.۰-۰. .۱.۱2.۰ ۷ :دح حتف 


ہک ۔ ہہ ۔ ‏ ۔ ‏ ہہ رہ ہہ رہ ہہ رہ ہد رہ ہہ دہ ہہ ہد ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ک رہ ہر ہرگ 
جک ۔ ہہ ہہ رد ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہک ہہ رہ دہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ۔ ۔ ہد ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ڈگ 


ک پ ۔ تہ _۔ ۔ ہد رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر رہ ہہ ح ‏ ہہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہد ہہ ہہ ۔ دہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ رح ہہ رہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہ۔ ہہ ہہ ۔ ہک ہہ ہہ ہرگ 





سے وج ی2 
ھی ان بی مسا نک کے پابند تاورہیں۔(ص:۹٢۲)‏ 


ان کے نی سیک کےعنوان سے مار می وکا نی 
ملک وک رکیا ضے معزنشین سیاقی دسپاقی سے ہن اکر خا نی یہنا ےکی 
کش کر تے ہہیں۔ پر عہارت اط رح سے : 


نظ پر کے ما فقہ می حظخرت امام الوططیفہ شی الد 
عنہ کے مقلدر سے ہی ںگرعا مقار ےتھوڑ ۱ لگ ر سے میا 1 
صصوف کا طر بیقر ہا ےکہ یج فروگی مسائل میں و خوداچتباد 
ا شی اشظارات سےکام لیے ہیں حضرتمحبوب الی قیس 
سر رت غلف امام کے تقائل صرف اسلئے 2 
ای عد بیشٹگاء یہاں انہوں نے قول امام پیک لکرنے سے 
زیادہ تقو گل رسول پپرف لکن کوخیا لکیا اور یمعمول اس 
سارز ین ےئ چلا آر پاے بصو نی تیم ہوتا مقاصد 
شریعت پر ا سک مثگاہ ہوئی ےر وعاجت ےےحت 
اروعا یکن فک جفیاد پرپفض مسسائل می فرد ہوتے ہیں 
۔اس کے پاوچجودمقلددی کے جاگیں گے بللہ ان یں 
قرسیہ ن بھی اپ ےآ پکومقلددی شا رکیا خی مل کک یتقلیر 
سلطان الا ولیا حر تچ نظام الد بین ریس سر٤‏ اس تر 


(آہ] 


کک خ ۔ ہ۔ ح ‏ ہہ ہہ رہہ ہح ہ ‏ ہہ رہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ جح ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہک ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۹ ۹ ہہ ہہ رہ ہہ ۔ رہ ہہ ہہ ہگ 


.7 1 , کفکا 
م7مم مجر “پاچ ںام “م7 ڈمم 2مم حم 7مں“ححم 7ح .م۲مم حم “چو 7ں“ 7چیم یعومجم اچم ھو اچم اوم یب مم - یں ۔ی ےس 


فاقاو ماف اعتاضات ...ںی ( 
جو ارہ تک ران زس و گی کون ۴۴ 
واجازت سے رفراز نیف مات ج بک فک دد فنن کی ماىر 
نا تاب عداریم لن یکر لتا۔ (الامان :ابگ:۲۵۰) 

ال عبارت سے مندرج یل با تی معلوم ہوٹی ہیں: 

ا۔ شا می پہدامام الم کےمقلدرےگمر حا تقلیییتی'تقلی رجا“ 
سے الگ ر ہے۔( تفلید جا دک یتر پہکی قسمائیس ہوچگی ہے۔) 

۳۔ص وفیا کرا کا یر یق رہا ے وک وہ مقلد چا وگال ہوے بللہ 
عالاتز مانراورضرورت وحاجت کے وقت پجوفروئی مسمائل ٹیس اپنے اجتماد 
اور پٛشنی ارات تےکام لیے ہیں۔ 

۳٣ا‏ ن بن فروی مسمائل میں سے بطورمژالل رات خلف اماع ا“ کو 
پیک یاجس کے قائل مر تےحبوب لی حے۔ 

۳م تکوب ا ھی قدیں سرد نے قول امام کے متقا بے یس اما مج کے 
قو لکوت دی ےجو بظاہرعریث رسول سےزیادہثریب ہے۔(ججی اہ 
ود امام اض مکافرمان ےکہ اذا صح الحدیث فھو مذھبی)اورعاشاہ 

وی ال نٹ رما یاے۔ 

۵۔ بیہاں بیٹھی نشیس ر ےک رت نظام الد بن اولیا تی سرہ 
نے چا وا لوا ںکواس وف تکک اجازت وخلافت یں دتنے تے ج بکتک 


کرودففت یی ا از ہے اہ ور کر لی 


ک خ ۔ ۔ ۔۔ ہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہد ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ رہ ہہ ہہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہں ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ہہ رن جج ح ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ح ‏ رہ ہ رہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ رح ہہ ح ‏ ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ڈگ 


فاقادمارفیی ا کزافات تھے ۶۰٣۴‏ 
یہاں قاہ لفور بات بیرےکہ: سم 
-- تنازھ افتباس موا نا جیب صاحب کے مقا لے کا سے اس میں 

اس با تک یکوکی صراح ت کیل ےک اناد عارفیکا اس سلسلے می سکیا موتف 

ے؟ اس لیے اصولی اختبار سے نمانقا کا موقف معلوم ہیے بنا اناد کے 

ا فافوا الال سے 
لا مت لہاسلا مکا فروی م کے اورق رآن وعد یٹ می سکوکئی صرح 2 

موی جودکیں ے ای لیے ام فقکواجنمادکی ضرورت پپڑ کیج سک وج ے 

ق رآن وعدبیف کہم میس اختلاف : پیراہوا۔ 

"0 بی لہ امہ فقہا کے مابین مخلف فیرر ہا سے رآ لااو گان 
ہے۔ائی طر اگ رغیرمقللد بین اس پش لک تے بہیںتو میا نکا متملنیش بر 
جاےگ۔اکرصرف ان کے لک ےکی تن انا مان عااے 
یں نما زیروزد رج زا کے ساتجعساتجھ اد ورحول اور د لی نعکوگجھی چھوڑ نا 
پڑےگا۔فتدبو- 

کور وعبارت میں ؛ ہنتف ممائل“ کی صراحت کے پاوجودررمطلب 
امام عم کےسارے سال عدیٹ کےخلاف ہیں“ مقلدین' 
ا حدیث کے خلا فک لکرتے ہیں راس لم اورز یادئی ے۔والله تعال' 
اجب الظالددیں۔امی صاف اورص تع عبار تکوکیاٹ بچھاض تک السا 
می ومطلب ڈلناخودعی ببت ڑا بپتان اورامزام تر ای ہے۔ ای ہبی تکی 
ا تونق عطافررائۓ۔ 


اض سس س٣س‏ ...سا 


م ا ےے تے ےا ے ر‫ یڈ 


ات سس ہے ۳ع شع ےا ےا ےر حر 


کَُّ“ 


رت رت تس تس ےو ا تع تع و ہر 


ہے ہت تےے ےت ے ہے ژ‪ہر۔۔ 


ہہ ۔ تہ ہہ ہہ ہہ دہ رہ 





مھ یسک :سم : 
۰ 7 پگ )_ )۳ 
وخ / 


ضانقاحکارفیہاوراین یھ سے کامل 
بح شک رم فرم اش مت ےکا ےکر بب تی انزام تراشیاں اور بہتان! 
اذ ال کرت ہیں ۔ٛس سے نی رجانب دارگوام وا کول مت لٹ ( 
می کائیدشواری ہوقی ہے ہےر کا 
ا کش کرتےہیں۔ 
الا نے ف1 ار فا سی تی ے0۵5 
ا ہوے دالا سالا نگل الا حسان :٣٣ں‏ ملا نا ضیاءالرآن ای صاح بک 
تق حتر بی ےت 


- ٭۔-۔٘ 
٭.. ٦)‏ 


...ا 
چج یٹ ٹڈ ۶ ۶ ہرٹت-۔ 


×۰...۰۱...-..٦‏ ۰ج 


َ‌. 
5 
خً 
8 


”ال عالی نے یم این تہ یکو بڑی خوییں ےا اد 
مان علم پل ہفوی تہ زپد وورخ ,اعت 
ضر جرات وشجیاعت سن تکی پچردئی ء برقت سے اجتتاب ء 
الال ےک جن اور چہادرے لے برق ری “ہے وہ 
تصموصیات ہیں جن سے وہ اپنے محاصص رین کے مین متزاز 
اوشمہورہوۓ ٤‏ (الاصمان اردو:٣كض:٢٤)‏ 
اس اقتقاا سکلف لک ر کے متا دی ےک یکوشن لک عائی ےک غانقاہ 
عارفیہابن تی یک عاقی سے وفیر:وفیرہ۔ 
ر یہاں چند باتو کی طرفتو جضروری ے: 0 


رھ تس تع روس عم دم موم ےج رجح رھچم رمیج رءیج مع جھھ جج رجیم مم رمع رع ہکم رھ ھجم ھجم وحم یح رکم رح میم رجھع جح میح یح جع رع عم رح حم جح رصع دص رح رمیح میس میس جع رح عو مج رکوس مد ری سی 77 


ہہ ہہ ہج ہش شر ہہ ہہ ہہ ہد رہ ہہ ہہ کہ ہک ہک ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


جک ہہ رہ ۔ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ۔ کہ ہہ ہہ ہر ہہ ہج ہہ ڈگ 


لخانظاوعارفییراعتراطیا تک تق ق نے ...نے 
بی بات 
رعبارت مولا نا ضیا ءال نی صاحب کے ایک میمون ہے این 
تی کا نف زتصصوف ایک مطال کے ماخوذ ہسے۔اور ا سے مو نا ضیاء ال نی 
صا ح بک ایی راۓ یا موق فیس سے بککمہ اکا برنلاے ال سن تک رالوں 
کو صرفأف لکیاے زاضلمضمون: ح وف تخل اص نے 
أحافظ زئہی (م۴۸>ھ ) ءحافظط زکائیل(م ے کے ء این دنق العدر(م 
٢٣ھ‏ ) حافظ الد بن اہن سیر الناک اور حافظ ابواحاح 0ھ 
۰ ےھ ) کے جوانے سے ان پیل انقدرعلاءفتہا وم رشن کے اعتزافات 
نف کے ہیں۔ج سکیآفصید مالاحعدار می موجودہے۔ 
ووسسری باست 


پت 
ز+ 
و ےہ 


کک کخ ‏ ح ‏ ح ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ دہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہگ 


ور 


ہہ ہد ہہ ہہ ح ہہ ح ہہ 


...ا 


یہاں قائ لتوجہ یہ ےک ہ مض رشن ورکور ہعبار کو ای کے سان ہو 
سباتی سے اک نف لکمرتے ہیں ۔ بی افتباس این تم کی خصو خصوصیات 


اورمتاصص ری نکی شہادوت “کی ڈ گی ضرتی کےشت غلا کے اقوال سے نا ماخوذ 
مقالہڈگا ر کےکمہبیری الفاظ ہیں ۔ او ری عبارت کول ے : 
”الد نزالی نے نخان جج کو بڑکی خوبیویں سے وازاشھاوہ 
از لم نل بقوىی وخشیت ہز پدوورم بقاعت یبر جرت 
شیاعت سن تک پر وکیا بنحعت سے اجتطابء اعلا ےک تن 
7 اک لیے و رگید شود ات یں ین ش9 


رس سح ھھع یع موس نموم حم رحس رجوجم می رج رجح رجیج روججح یھ رمع رع رعح مم رھ وم ھنم رحس کیج رکم ر۳بھع رمیحٹ رصع جع رمیص جع سح رح رح مجح بحم صصح جج رہن میجل رت رححص رح مجح یی رس رسس 7 


نت کت ےت ےت ےت ےت ے ےت ہت ٤ے‏ ہے ےر ہہ رر 


0 نقاوحارفہ مراعتر اضا کی میق 0 ۶٣شش“٭‏ 0 ببب‪۷ئ ۳ 6 
سے وہ اٹنے محاصص مجن کے مابین متتاز اوشہورہوے اورای ۱ 


نا روہ عم ج نکوخ این ہہ سے اختلاف تھا۔انہوں ن بھی 

ری سح ت ظرنی اوراعلی افلاتی کامظاہرءکرتے ہوئے جخ 

ئن تی یک ان تحصوصیاتکااختزا فکیااوران کے وو بل 

گی شبادت دی (الاصمان:٣ض:ے۱۰)‏ 

ہیں ذ یس تی ھی سے پند یل جا ہا ےکہاس کے بح نے والی اتیل 
نکی اق نک نے موا کی ات کی کا 
ا ے چویسل اقتباس دیکھے سے وا تع ہوجاتا ہے پھ رج بلح پکف رکف یں 
ہوا توذنك ریف ری کی ہو جا ۓگی؟ 

ٹیسری بات 

الادسار ٢:‏ میس پیکھون وہابی کے رو می ںککھھا گیا ے جوتصوف پا 
پالکیہد کہ تے کیں ء عالا لکروپاہیہائن تی کواپنا ٹوا ورس نیل عال لیم 
ا کرے یں چوں نےتصوفکی دی سا سیف اور سا 

تو فک انی مکرتے ہو تحصوف اسلائ یکی تحریف وتوصبی فکھ یک 
أ سے۔ مو نکل ھکر با تکیا گیا ےک موجودہ وباب کال وت 
تقیقت کےخلاف بلہاپنے ٹوا ےبھی خلاف سے کیو ںکہران کے بیو 
سے ےت تس سے تھیہنے 
ً نے یم میس خی اسلئ یتو کفکہا ہے ہبی اسل ٹیا ھی ہے۔ ش9 


رس ہع روس مع مم رکم ھمححم رمیج رمیج ریس رج رج رع روج رم عم رع رمع رح رم رص موم رص رح ابع بحم رمیحم رھ جحح رمع رءجحع رصع مع رع رحس مجح ربع فرص جح ,مس ےم رحیجلریہرمیج رح رویح رح رم میحد رس سی 7 


ح یت کے ےت ٣‏ تع ٤‏ ہک ہیر 


رت یت نت تا ور ےت ۶ے رت 


ہے کک ہکہ رک ک شس ہہ سک۰ رہ ح ‏ ےہ ہگ 
ہہ ۔۔۔۔ہ۔ ‏ ہہ ہہ ہحہڈج ۔ 





جب پجف سکرم خر مااس من ےکو نےکر خل طف میاں پیا نے تو مورخہ 
۵ حرم افھرام ۱۹/۱۲۳۷ اکر ۲۰۱۵ کوخانقاہ کے تر جماان مولا نا جیب 
ا کی نے ایک وضاتی مان جار کیا جھ بے : 

بن تچمیگم را دوگ راوگر 
تلق سے جو باٹیں خانقاہ عارفیراور ال 

کےملا ومشا رح کی طرف ملسو بک گئی ہیں دوسب الاماٹ 

پ نی مہی ںکبونکہ مانقا ہکا سی حر ےئ ےکر 

وگمراہگمر ہون کا سے۔اور وہ ساارگی پا تی مج نکا ماب 

خانقادکی رفک کیا ےء وو تذل ۲ن علا کی با خیں ہیں ج نکو 

صولا نا ضیاء الیک نی نے اپنے مقالہمی لن لکیااو پچ را کا 

لی رواخ پت یکیا لان اش متخ ارات مشقل 

را کر کےکمروفری کا مظاہرہکرر سے ہیں اور غانقاہ 

عارفیہ سید سراواں شری فکوعوام الزا کی نظ یں برنام 

کر کی ناکا مشش میں کے ہو ئئ ہیں لاد ری نک 

حد سے پاک فرماۓ اود م س ب کون جانے اوت الیم 

کر ےکی توق ع ار ےآ مین“ 
7 ز بی شعور رات خودانداز وک کت ہی ںکہ: كا 


رھ سح تح جع رمع رم مم رج رج رہیچم روج ر۳یج جع جھھ رجح رح مع رہم رح تمہ رم نم جم رحس یح رح کی کرحم مھت جح رمع رصع رع سح میم رع وص جح دج دص رج رمیح میس رمع رمع رم رکوس رحس مد رع سی 77 


کژ ۰ ۔۔ _ ہہ ہک رہ ہگ ہہ ح ہہ ح خ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہج ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ح وہ ہد ہہ ۹ ہہ ہہ ہہ ہ۔ ہہ ہہ ۔ رہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ک خ ‏ کہ ح ‏ ح جح ہ ہہ ہہ ہ ہہ ح ہہ ح ‏ خ ہہ ہہ ہہ ہہ جح ہہ ہہ ہ ‏ ہ ہں ‏ ہد ہہ ہہ رہ ہہ ہ ‏ حک رہ ہہ ہہ جح ج ‏ رہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہرگ 


خاقاومارنےےا اضات ا تع یم 1 


رصن جن راجح ر۲عن مجح رح رحب رٹ تیرح روج ”رصع ٣و‏ ترسح سد اعد سر رد ری رسود رح رت حا 7 


اولا: وھ دح ٹا 


فلطعی پہنایاگیا۔ 
پاذھا: ج بات خود مولانا ضیا کیا نیہ اے خانقاہ عارفی کی طرف 
مو بک اگیا۔ 


الفا: خانقا ہکا وق فآ جانے کے باوجوداور ا سکی وضاح کر نے 
کے بھی اے نخانقا ہکا موق کک ہک رعوا مکو چٹ رکا ن ےک یکوشن کی جاردی 
ٰے ےء الزام تر اشیوں اور پہتان پا یو ںکا سلسلہ چارگی ے۔ اب پیہٹ 
وھ رٹ یکاکون سا مقام ہے؟ مار یپ سے باہر سے ۔ رلوس ات اہ کت ہیں 
کرایتقن او لے بن سے اور نکو یک کیو فی عطافرمائۓے۔ 

ا گان اف 

ان یہ کی تع بی فکرنے و الما تے اب سذ تکاضگ؟ 

ہا ھی لوہ پر سی با گی جال ےکی ہےکمہ امن یی کی متائص لک رنے 
والوں اک اعم ہے؟ کیو ںک ہآ پکومعلوم ہہونا چا ےکہ ال سنت بی کے 
اکا برعلا میس سےپیئ نے این تییہکیتریف وتوصیی کیا ہے اور ا نکی 
۱ ا خ میں شا کرای ہیں تو اس سلٛلے می عد کا تقاض می ےک اگ ری 
ای خائی یآ ا کی خامیاں ضرورا ماگ رکیا جا ےلین سا میں اس کے 
7س یتو ا بھی لی مکیا جاۓ ۔ اس کے ساتجھ سا بھی 


۶۷۹۹۶۹۹۹۹۱۳۷ 


ک خ ۔ ‏ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


یہ _ ۔۔ ہہ ۔ ہہ رہ ہد ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رک رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رر ہک ہہ ہہ کہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ےد ہہ ہہ رہ ہج ڈرہ۔ 
ات تسس تس سے ےہ ےت ےا ےا وہ‫ ژ ہر 





جانا چایے کال سنت بی سے بہت سے اکا برعما نے این تیج کی نان کی 
ا ہے اورتحریف دتوصحی بج کی ہے۔ چنا ملاع تقار ”فی مرقات شر 
ا کون میں عشات بای کے کے میں ابی تیاور ائن نی مکی تا ئتیرکرتے 
ہوۓے ککیعت ہیں : 

”چٹ بھی منازل السا ئ نکی شر ]ملف یلیم ] کامطالحہ 

کر ےگا ءال پر وا ہوجا گا ک_انھما من ہل السنة 

والجماعقم بل ومن اولیاء ھذہ الام ة “شی اہن تاور 


۳.2-7 


جککآ۔ 


ئن نال سنت دجماعت سے یں اور بیدفٰوں اس اممت کے 

اولبائیل سے یں۔(مرقاتکتابامل اسم نے :۸ءء “)٢‏ 

می شی رف بن اسم ٘یل مہا نی رحمت اللدعلیراجن جبیراوداین 
ا تی ا 
کت ہیں : 

”تو جان لےکہ این مجییہ اس شور بر پا حر نے 

سز نل یز کی مپکان یڑ ےت کال 

ہیں یں ووسص نی سائل پرلولواورمرجان ڈال دیا ے 

وی پھر اوسییپء رگن دگی اورمردہ ریییٹرال۰مات 
ر تی کی مکہگی اور بہت رصفت (سحندر ےسا ال پرلولواور مجان کا 


رص رس تع رع جع وھ ھرىع رج رج رہجم رج رءیج مع رھت مج رج ہم مع رج مم رھ ھ مھ کس ری رم لیم مجح رج وحم می ر۰وحعرجعع مسح سح سح رجح رص رح فرص رح رحیج رحیہ یجن رع رج رکوحج می رح رمع رم سی 77 


ک خ ‏ ۔ ‏ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ح ہ ہہ ح ح ہہ ہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہر کہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


حں ‏ ت ‏ ت ت ‏ ت تتت تتتت ت ات رت تر ےت ع ےت کے کے ٤رہ‏ رر 


>< ہے مم مم یھیے ۴م 
1 کی 1 





ےنا ان پر الب سے یں امن یی کی دوصفت ہیںء 
ایک پٹریرەعفت ہے دد یکم ا ںان تپ کے ایام 
ہون ےکی صحفت سے جو ان پر الب ے۔ ای عصفت کے 
سب دہ مدع کے ھن یں۔ یں نے اپ کلام ٹیش ججہاں 
ان تی کی لی کیا ہے علی اکر امن تج کی ای عصفت کے 
سے رت ار زی اتی ای لی ا کےا 
بس سے برت سے لوکوں نے ال نکی لی کیا ہے ء این تبیہ 
گی دوس ری صفت مڈیمومہ سے دانع ک ےنت برکتوں میں ان 
کےامام ہو ےکیصفت ہے اوران تیی ا صفت کےسبب 
مت یی جانے کے فی ہیں ۔'(ص:۴٣۱)‏ 
اس قدرحق ال جان لےنے اور نا کی ز برنظرت ری رآ جانے کے بحدھی 
1 دی الزامات بل رسےدہرائے جا میں تو اس وف تآ پکوک اکنا ہے؟ پم 
اں فیصلہقا رین کے عدل اورا نک قوت فیصلہ پرگچوڑتے ہیں- 


1 


جح ۔۔ ‏ ہد ہہ رہ ہر ح رہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہج ہ ہہ ہہ کہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ رک ہہ ح ح ‏ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
ک ح ‏ دح ہہ ہہ ہہ کہ رہ ہہ ح رہ رہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رح جح رہ ح ‏ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ہہ ہہ ہہ ہ۔ ہہ ہا ہہ ۔ہ ‏ ۔ ‏ رہ ہہ ہہ ےہ ہرگ 


ےت تسس سیت 


غانقاوعارفیہیراغتزاضا تک تق قتےاے ...|۳۸ 
خانقاہ عارفیراورئین طلا یکا مل 

ال مت ےکا خلاصہ یر ےک جامعہعارفی ٹیش رنے وا لے ش چون مکھاراور 
تی داش ول اذ ان حہمص تی نے ان ڈو اپے نیا تا سد 
اتساۓ رکھا جن دنو ں علومت طلا قیخلاقہ اور چندخوا تی نکی > بنا پربینانیوں کے 
ا ہا جاساں سو لکوڈ کے نفاڈی یکویشش شکردرنیئھی۔ 
مولانا ذیشاان ام مصباگی صاحب نے ال مت ےک یعلھی جہتو ںکو بیا بیان 
ا کہ کےغلاے اس بارے می فور پفکر یگنر اش کیا یک 1ر مہم ورک ر کے 
اہ وو تال یس تا کو تک یشرنیدت می ڈل اندا زی کا 
ایل ے لان انوس ملا نا اش کے ان موالات او کاٹ 7 تو رکرے 
گیا بجاۓ اسےز پرذقی مقنازح بن اک رعکومت کے لیے راست چم وا رک یاگیا- 

خلصانہ اور مفاد بیس یی سے جانے وانے کا تکو ز بر تی غیر 
ا مقلدیت ے۶ کرسکی ریگ دے ا۶ گمیا۔اورائس طرں علوم تکواپنا ام 
٘ رن ےگل بویٹ دیگئی ای لپن دانشوران ب کھت نظ رآتے 
ُ ای رہگ رددہرمحالے میں سکلی منافر تکوڑھاداد ین اورآ ہیں یں ا تار 
١‏ پک رکے اسلام ین طاقت ںکونقویت چیا ہا سے۔ یں ایما ت وی ںکہ 
امسلرانوں سے ین ین گر ووککوتکافضل خورے؟ اس را ےکی نیت 
کیاے؟ میں اس سےسرویازئی لن ببضرو رکیل گ ےکہمولاناذیٹان 
(صاحب حب کے جن وا تکومککی مناخر تک یآ ڑ ٹیس دہاگیا خر دی ہواش) 


مھرسع رص روم مع مم موم موجہ رمیج رحجم رحس رج مجع رجعع رمیج جم رمع رع رس ہیس رم کم وص ریم جع مجح رمیحن رمع جح ۱ھ جع تم تح تد مل فرص حر حرج رہن مج رج رح روح جح رح رمع رم سی 7 


ےہ 


گ ۔ ‏ ہر ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہدک ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
7.-۰۰.۰۰۰2۰ ۱۰ےک جح 


سس ےو ےر رر ےگ ےی رٹ 


...۰ .7۰.2.۰۰ 7ا حر ےا 


چک 


خاقاومارنی راعڑاشات کات تیگ ..._۔_______ _)_ ۳٣۹‏ 1 


کے ےت 
کسی گ گی وم تک وےے اط ل۴۸ 


ایا ملہانوں نے اپنے مت کین لی سکیات وی کےضماق دفاراورکنارد 
٘ ا کین نے لکرمسلداوں سے من کے یا ایک ظا ئل ب ما سلکیا۔اں 
لی کے س اتکی ہاور طرحع مل فرقوں اور جماعتوں ین ای ظاری 
ت2 سے 

بہرعالی بات صرف ات اش یککہمولانا ذیثان صاحب نے چند ا 
یی ںکیا۔ نادان دوسنتوں نے اس پرسسککی مناخ کال لکاکرجزازھ بنا 
اور ىہ افواہ پیل یہب غانقاہ عارف کا مرف ے اور بہغی رمقلد ی یکی 
أحمایت ے طفیروظیرہ۔ 

یں دنوں جامعہ عارفیہ کے بای تن ابوسعیدعفوی دام فہک جااب | 
سے و ا ا ۵ ٹر 
شی ۔اس کے پاوجودکرمف رما کو لک یکارستانی دی کہم ولا نا ذیتان صاحب 
الات کات جوان کا مرف یی ا را سے خاظر ضر 72 
جانے اگاعالا سک خانقا مار فیک شی بھی اخبا ری شال ہو چک تھا۔ 

راو یں الیل سنت کےمعتد عالم ومفتی حضرتمفق مع الکن رضوبی 

کبھی پاپاکران پردہاڈالاگیا مخت صاحب نے ام ٗ٥لت‏ ےیک خاکھھا 

شس کا جو اب مولا ناذ ینان صاحب نے دیا اوریضقی صاح ہے سعتنن ہو گے 


.3 کا 
جح ںہ ایی ۲ی کی وو یی بی یی م7 موہ 7مھ 7ھ ہو و مھ اھ یھ ایم ھی ھی یھ یرومیم تی ہیی 7ی تی ہی 


۔ ۔ ہد ۔ ہہ دہ رہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ رر جک ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


٠ ١ 0 ۱۷. ٥.۰0.۰۳.۰۰۱... 


يَ 


رر ہہ ۱ ےہر 


ت ات رت و ےت ے ۳ ہت تےے ےت ے ےہ ےت کیٹ 


ششتجععکعے ےت بہت ےہ کے ے ‏ ‫۱ ین ٹژ۔ 





۲ 
ھم ذیل میس مولانا ذیشان صاحب کے سالا ت/ ات خانقاہ کا اخبار 


یت ا ےہ ہے ہہت تے ےے ےہ ےہ ےت ۔ ہر 


یس شائع شدداشیشییٹ اورمغقی شع لیکن صاحب کے نام مولا ناذیشان کے 
خیاکاد*حص بی لکررے ہیں جواس بٹ نے تحلقی ے۔ 


فیسیک پرشا لح مولانا زان صاحب کے والات 

ا-اںرتعطا قڈاغی بش زوروں پر ے۔آ خر بتارے 
ای امحف تن وا یں ہے۔ اس لی ےآ پ ححضرات جھ 
برا مر کنا ڑ سی ھومرھوںی 
اس یس نے ورظروری ماود تال 
عالا تک جائزو نے رفیل ت کب ربحدرییل پچچتازانہ پڑے۔ 
٢‏ ووروای چس سے حطر تعمر کے شی ےکا علم ہوتا دنر 
اعد ہے وہ :تو پرےطور پرمقلربین کے لیے مغیرےاورنہ 
خی مقلدین کے لیے وک یاا ری میس اسے ہضیاد نایا اسکتا ے؟ 
٣ال‏ کے پپرائس ار بصہ کے علادہء اممت کلف طبققات 
ملف نق گر رت ہیں۔ ایےے بیس اس را ےکواجماغ اٹل 
سن تکرنا ہی ہے پاا ہماع اصت؟ ج بک ال ظوابر اب شع 
فی ر ناف نان رک عائل ہیں- 

حر تگ رکا بات پراگرا ماع مان لیا جا او ری 
وسنہ اخاغاء الراش دربن کے ححت اگ اسے واجب اتل مان 


۰ 


ہ ۔۔۔ ۔ ہد دح ہہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ۔ دہ ہہ ہہک ہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رر ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ رہ ہہ ہہ جح رح ہہ ہے ہہ ہش 


سس منص سم نار 6اگ 





ح ات سے ےت ہے کک شش ہہ رج ےت ے ے ‏ ہہ ہر 


رر بڑےما لک تھول مصرسحودیہء اکتتان نگل دلیش وغی رہ کے 


ایا ےت سوال ماک سال سن الف الراشرست الرسول 
کے پالتقائل ے۔ ا یےے میں او لکودائی واجب اتل اورخالیٰ 
کو دای وخ تی لک ررصسق سے؟ 

۵۔اجما بھی شا پنے ماخ کاب سنت یاقیاس ری ہنناہے۔ب 
اما خاش وا تاد نی ے ای میں پذرکودہاجتھادیشن مقاصر 
ادحالات پرینی ےکیانپفظ را نی کی جات ؟ 

٦۔‏ ای جو انے موججود ہیں مین سے اندازہ ہوزنا ےکہ مرا ہب 
ارہز کےبجن علا بھی اس طرف گے ہیں ۔ ظاہر ہے ال نکی 
راے مراہب ار بعہ میں شف سے کا نکیا عالات کے ہر 
ک کت ٹول خمیف مغ ى نہیں د یا اکا 

ے۔دگ راہب پرہ اٹول ضعفہ پر جن علان نے د سے ہیں 
کیاد ری فکتاب کے م رکب ہیں؟ 

۸۔ الظلاقی متا نکا 7ك جب 
دوعرت طلاقی ہے۔ اگمرچہ دوطلاقی کےمعنی بھی لیے جاسکتے 
ڈیں۔ اب اگ عفن خی رظاہر پر انم ارب ہکا اناقی ہ گی توصنی 
انی طور تج ریف نی الڈرآن کےم تارف ے؟ 

۹ سو نی صدر م(مقلرایرمقلر) آبادکی والے ورچوں 


حیرص جن جم رتس ہیس یسیع تر 


حت ‏ تس سس تع ع ہہ ہے ےا ہے کے ہے ہہ ۔ ہہ ہہ 





حت ات یت ا ا و ےت کے ت ےت ہے ے ےرت ۔' ۔ ہر 


۴۲ 
ھی اس کے میں فق ظاہری اختیا رکچ یے ہیں توکیاہندسستان ۰ 


یے سیلوار کیک بس عاماے احناف انف ےکوقکومت سے 
منواپائئیں گے یادیر یا سو یر ہزرارخالشتوں کے باوج وحکوصتء 
عداات اورمیڑ یا سب لکرس مھما لک ٠‏ فقہ ظاہری اورتتوق 
نسواں کے أرے کے ہار ےیک سک طلا خلا ونیک 
تک کا اہ مات ودای کت 

لوم تکا ہیا قداماگر وی شر یعت ٹیل مداخحلت ےو بے 
عاوص وخ 7 سے سکرو وی اوران کےعلما جو رف رض 
پیے سے انحجام دے گے ہیں ان برک اعم عائتد ہوگا "کیا دہ 
سبیٹھفیۃآنڈفراورنفر یس گا 

یہس والات عالا تک یبنی کے یں نظ ر سے گے ہہیں متاکلہ 
ہار ے لا ےکرک سے اشن کان اوخ : 

اے اس ز ود چیا ںکاپتہاں :نا 

کا منطفظرسا نے نہآئے۔ سب مجنا کے ہو می ںآ ت ےل کیا 
امیس کرنے سے پل اتباب با تٹکدال یل 
کرتے ہے سنجیدگی کا ضرور خیال رنیں۔ تائید ب یگھیں 
انتلا فگھی سیق ےکیاجاستاے۔ 


حتت تر ا ےت و تع ت مع ےہ ےہ ہے کے ۔ے۔ ‏ ہر 


وم کےای کس دانشود کے سوالات دکات تے جوا بگی| 


۲ج قجچھہووسمجستلے 





7 
ُ 
آَْ 
آُ 
آُْ 
آُ 
١‏ 
آُ 
آُْ 
ُ 
آُْ 
آُ 
7 
َ 
آَْ 
آُْ 
آُ 
َْ 
آُ 
آُ 
۱ 
آُ 
آُ 
۱ 
آُْ 
آُْ 
آُ 
۱ 
آُْ 
َْ 
آُْ 
۱ 
آَْ 
۱ 
1 


رس 
”آپ ےون مس آتک بات ممیرے لیے قتدرے 
نیف دہ رن یک عالات اورسیاسیات کےتنا ظ میں طاتی 
لان کے سے پراچتما یور وخونش کے لیے جونکات/سوالاات 
سال پھر پلے ہم نے اٹھائۓ تےہ اکٹل اس کےکمہ 
لوت ان خی ںیکوکی چب کی عم ناف زکرےہ ہم خود اصول 
شش لیج تک دی می ںکوکی ای ٹہ تہ ہو زی ںکمردی کہ 
ناشن اسلا مکواعتزائش اور رکا موںحع ضر ہے۔آپ نے ان 
سوالائث/ لگا کا ڈکرکرتے ہو ت ےتوب بی بیہا کی ںاھ 
دیا تھ اک کیا رہ خاموقی کے ساتج خی رمقلد ی تک راہ پرقلم 
رکھنانمیں سے؟“ آپ کےکلتقوب ‏ جس بیکجھ یککھھا تھ اہ اس 
وفت بیں نے مولانا ڈیاان صاحب سے راب لدکمرت ےگ 
کیشن یھی یکن را نل ہوسکا تھا۔ یس نے ج بآ پکو 
اددلا اک ہآپ نے لوگوں کے اعراضات سنتے کے بد پراہ 
رای ےکک ہے ەو لات ضرتے اشن 
ای پکرے ماگے 7.92 نے ای ںآ پکوووسوالات 
یی ءآپ نے ملاظ ف مایا پچ راس کے بعد جھاری یکو 


کرد ۔ ۔۔۔ ۔ ‏ ہہ ۔ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ں ‏ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ جک رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


+ 
۰ 
٠‏ 0 
رس ےرمع تمصع رکوس جع دح رکم رج رج ر'چجم رج رحیج دع مجع رحوجع رمع رح رمعم رمع رم رم کم ھجم رس یجس رح لی مم مجح رمع ریحع رع سم رعم رمص جح صرح ہم رح رحیجم یہن موجن جج رح رج حیحص ری سی 77 





ہد ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہک ہہ ہہ جح ہہ ہد ہہ کہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ لہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ہر رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہر رر ہہ ہہ ہہ ہگ 


درست ہیں ءان می سکوکی نقاع لگرفت اسان ےکن 
نے زان ات ان تک برکیں ڈا لے تےاورنشس 
ےآ پکیممکرمم میس اس رائۓ سے انا کرلیا تھا۔ جب 
نے بیتفصیلات یاددلا میں تو ری قدرآ پک یادآیااور 
آپ نے اپ یعھراورستتعا فک ع۶الہدیا- 

لا خلاشہ رو روخنش نت ے گپیں دہ فا تت تن 
میرے کات سوالات تھے دجوم را موق فک یں تھے نانقاہ 
عارفیکا موق فکیو ںکر بن گے؟ اب اس با تکوائل اف ے 
بب رکون کا ج ہرسال تدم سس سای پر ملف 
شا تال کی ر شی می ادا یو ہشیش کر نے کے لیے 
ہی سییدنارکرتے ہیں ا بکوکی ٹون بی بہوگا جوان سوالات 
کوموقف کےگا_ 
پپرکیف !خغانقادعارفہکےز یب جاددے آئیں ام میس طلاتی 
خلانظہ کے کے پر و کی رائ ۓےکی حمایت اورعکوص تکی تر دید 
ُل اپنا زودار بیان اخہارات ام7 گروایا تھا ۔آپ نے 
کہاکہیہ انی لال ملا۔الن طول موا نامجیب صاحب نے 
جو پکوو ہٹس اورک گرا مکی ءا ای سےدن اورتارںےٌ کے 


._.٦‏ مم 
2۷ 


ہوئی۔آپ ہے ا ار کی تو ںی فمرمائ یج یک ہسوالات ا 


ہد ۔ ۔ ہد ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ شر و رہ ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہے ہہ رر رہ ح رہ ہہ خر ہہ رہ ہہ ہہ ہگ 


وس الپ سا ٗوریہت سھگ 


انقاہمارۂ َ . ٭ 6۴.۵ 
ٌ ساتھا نک سیک اسم بن :شھاٹ ان کے پاش موجودتھا آپ نے ۱ 
دوبار ہی کے لی ےکہاہہھم نے یس دو با چواد یا آپ نے 

اں پیل انشراںکااظہارف ایا وش را 
خافاہکیعطرف سے شاف اخ ار ر یرٹ اورا کات اشہ 
اب وقت آ کیا ےکہکک کےترام ان پندشھری ش ند 
علوم تل نطاا قد 321 
مروف ےون اورداگی ال ن چنغ ابو سعدرا یآ بادکی نے مسا سو لکوڈاورطلاقی 


1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
7 
1 
1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
ا 
ا 7 
1 ۵ا/؛ + ۰ 
1 اش کے کے برعکوصتکی ژمفگی 
1 ْ 
1 
1 
1 
ٗ1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
ٗ1 
1 
1 
1 
1 
7 
1 
1 
1 
1 
7 
1 
1 
1 
1 
1 
ٗ1 
1 
1 
1 
ٗ1 
ٗ1 
1 
ا 
1 





پرلیس رییلیاسرسراوال ءال ہآپادے وم م ٦۱٭‏ ۴ء :من ککاپپرالن ماحول 
دا ران راب ہہوتا جار پاےء ہندوستا نکی تم گا مم نت بتطرے میں 
صوڈیوں اورسضنوںل کے یریم رس میں فسطا نیت نوا زعنا ص رت زکی سے زہر 
گول رہے ہیں ۔ سال سو لکوڈ کےلرے کے سہار ۓ ھی بر بے وین 
عناصمر اوران کے سا تھ بنحوسیانی ش ربہند مل ککی خوش سکوا رف اک وید رکرنے ء 
ہا ںک کٹ نی ردای تک ریذزٹی دشناغ ماحول اورسبکیارتا و نام کے 
اور ےو نی اورفسادچھیلانے کے در پے ہیں۔ بجی مسلمانوں بی کےخلاف 
ٰ یں پپرے ملک کےخلاف سے۔مسلمان اور پر امن ہندوستاٹی اس بےد 7 
ور فا ئیت کےکھی لکویھیمکامیاب ہدن نی دیس گے۔ان خالا تک 


رھ سح صصح جع عکع دم مو روص رج رہیچم رج رءیج یمجع جھج رج رح رم رمع رسع مہ رھ ھ مھ مھ حم یح رح یسب رمجح رجھتھ جح رمی٘ع رجحع جع مع رح یح جعب رص رح ہتس رح رعیچ ریہ حیجن چرم رمجج رج رح رم سی 77 


کٹ ۔۔ ‏ ہہ ہد ہہ ہد ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ دہ ہک ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہو ہہ ہہ رہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہ۔ ہہ ڈگ 





اٹیارڈافاجمارڈ سیک رفا :الآا رکا ررض ناو ز٣×‏ 
محبت کے دائی ناف سحیراحمائن انڈش یی پفوکی کیا 

طلاق لاہ کےمکے پر الم دنوں اٹ رے ہے پ رگنضکوکر 
ہوے نے ابوسحیرصاحب ن ےکچ صو و کا رہب پر ے۔ یکو 
طلاقی د انیس جات ء البنتعلومت شس روہ پل دی ہے اس کے یی 
نظ میں اس تن طلاقی دینا تی ہوگی ۔اس کے خیرم ککی سالمیت برقرار 
ًِ ا نجیر وبتی۔غ ‏ ےکاخ دا یکنا بک رش می جدقاون بن کا ے۔ 
ےکوی انمان بد ےکی طائنت نیس رکتا. با سے دوائٹی ایک بن سکتے 
یتو طلاقی سے اگردوجراہوجا کی تو اس میس تر تک یکیابات ے؟ یں | 
ا تقد وطور پر ش بجعت اسسلائ کی فا تک لی ہے اوراس مال بیس ہ سی 
کی کی سن ےکوتیارکیس ہیں۔ 

نے مز 27 اک یسماں سو لکوڈ نیل ایک ڈرامرے۔ ا کا مقر 
٘ ا مسلمانوں اورہندوستان کے پر امن ش ریو ںکو ہراسا نک رنے اور مک ککی فضا 
۱ ا زم لور نے کے سوا پڑجڑڑھی ہیں یہ ہملک کے سیوا رآ می نکی کرت 
ٰ ہے اس لیے بعشیت مندوتانی بھی جم اس ےقجو لک س۷ر کت ء چہجائے 2 
کی یو لاو ر ۓآ لآ7 ج۶ا ناو مجلٹ نال 
ا سے نی ےجس بین لکی اجازت جماراسل رآ تین یی ںکھی دیتاے 
تب دنر مراہب اور ناف لکوان کے برہب پیل کی اجازت دتا) 


ہم رس مد روس رع وم رکم رج رج رہجم رمیج رىیج رح رمع رحیجع رمع رس رمعم رک رم رص مم روم رد ریم رع یح رکم رھت محع مع رجحع رجح رعح حس جح جعب رص رص رص رحح یج رحیہن یجن رح رجح روحم رح یع رع سی 7 


6 


جک ۔۔ ۔ ۔۔۔۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہر ہہ ہہ رہ ہر ہر ہگ رہ ہہ 
سیت ا و ےس سے ےت ےی ڈگ و ےہہٹژ۔ 


خ'[ڑتتػڑ۶ ت۳ ۶ت رٹ 


مج ےک ےت ے ےي ےا ےت تہجےت کے ہےر رر ۔ 


یت رت رر سے و ےش غ ت ٣ع‏ ہت و‫ ےہر 
<..-...٦‏ 





ک خ ‏ ہہ رح جح ہہ ح ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہد ںیہں رح ۔۔ ہہ ہہ کہ ہہ ا ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہج ہہ ۹ہ ہہ ۔ہ۔ ہ۔۔ ہد ں ہہ ہہ ہہ ہرگ 


ہے۔ ہم ہندستائو وا الس ہردانیی ںکرسکتا جو نیاں 
نت کک ین وارے سا ضرق شی نکر ان بی کس نو ارت 


تا ٹی ھی یں 





۱ قدر ان اوراالل ملسا 7ایا ۓے بوگی اگرکوئی ہیں ک6 
ساملہباری روا ںکاکیامطلب وکا ےا ںکافیصلہقا می نکوشودکرناے۔ 


لمساو 


اله آباد/ قرب وجوار 


تام پٹ شی شر پین نوم ت کا نطااق رں! 


معروفصونی اورخانقادھا فی کے ماد ڈشی س تن اوسیدالآ اق تڈائ کروی کزمسنل 


سی عراوال: * ال ہآ ا2ری ریی :لک کا 
ئن ماحول دن بد قراب ہوتاجارہاے :کک 
تق دی کا جن تہ یب خطرے بیں ہے ہسوفیوں اور 
لنوں کے یریم رس یس فسطایت نوا خناص تی زی 
ہت کول ہے کیں یکسا سو لکوڈکیأورے 
کے ہار یھ رید ماع ناضراودان کے رات 
دای ش ند کی کی خوشکوا رفا کوک درکرنے؛ 
یہا ںک کرت فی ردایت ہکش خی دنق باحول 
اورسی قافو نک مککرنے اود بے دی اورفضاد 
بھیلانے کے ددپے ہیں۔ شی مسا نو ہی کے 
اض پر تک حخف جا اشن 
جندوشائی انس بےد تی اونطایت سکیل کویی 





کامیاب ہو نے یں دی گان خیالاتکاظہار 
خانقاہ عارفیء سییراداں ال ہآباد کے سا ادن 
السحیدرا مان الڈشج کیچ فوئی گیا 

طلاقی خلا کے مض نے پر عالیہ طول مل اٹھ 
رے ہناے پرافشوکرۓ ہوئے جن او سسیرنے 
کہ پاکہ وو ںکاذوب پریہے۔ یک طاق 
وی ایس جات ء ابد عکومت جس روے پرگل ری 
سے اس کے یی نظ نہیں ا تین طلاقی دینا تی 
ہیں کے فی ککی سالیت راہ ٠‏ 
لق سن کہاک خدا اک تنا بکی رڈ میں ج 
قادن ین چکا ہے ا ےکوی انسان بد ےکی طاتت 
نہیں رکتا۔ مکاح سے ددائٹی ایک مین کت ہی تو 


رتا ہواپالکی ے جو آ خرکار 


۱۷۸۷۷۷۸۷۰۔۱ا1٥٢۰٣٢م۶۰‎ 


طلاقی ےاگردو دا ہو چا نی تو ال می جب تگ کیا 
بات ہے؟ گہیں محدہ طودپشریعت اسلائی گا 
اق تکرٹی ہے اراس میا می ہم کی اپ 
بھی سنےکرتیا ایس ہیں۔ 

ینم کا کریےماں سو لکو کیل الیگ 
ڈدامدہے۔ یہ ہنا کک کے سیلارا می نک کرت 
ہے اس لے ہشیت ہندوتال بھی جم اےقول 
خی سکرککت ءچہ جا کہ بح یقیت مسلمان اے 
تو لکرلیں .نو ن ےک ایق رآن جماری راڈ 
کیل ےکانی ہے جس 1 لکی اجازت جمارا سار 
آئی بھی میں دیتاہے ہم ہنددت و ںکوا تق 
کوک بت ردائیی سک رکا 








٠۰ 


کیک ہد ہد ہہ در ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ۹ ہہ ہہ ہ۔ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


ےت تس سیت از سس ںی 











خاقادفارفیراغترا فیا تک اضق ا۔م ٢۸‏ 
خانقاہعار ف اور فی کا مل 

کے ہیں : تی ہے جب ظا مکی نیت یں کا مکی ہے دییل او رج ت۔ 
ا خانقاہعارفیہ کے زامن کے ساتوبھی بی معا مہ ہے ۔ا بتک کے ٹپی کر دہ 
مال سے اتقاتو وائ ہو کا ےکہ رکف ہکس طرح زبرؤ ھی وگکری 
پاتو ںکوز پرتی مقنا زع بناکر خانقاہ عالیہ عارفیکو بدنا مكمرن ےکی المقدور 
ا کیشنکرے ہیں جس کے لیے دوامزا تراتی نان از از تن 
دبر یدہەسیاق وسپاقی سے ہن اکر خل طس پ> را ےن ےکگ کر نکی کے اوران 
سب کے کے باوجود ان کا ج خدمت دین مجروں کچھ یں ہوتا۔ انل 
٘ ا پش یم ما 7 رر رت کے می ںی انکر 
ابی روا ادف را ےل ال کا خانقاد سے تصرف بی لو انی یں ے بللہ 
الزاماورہتانٛے- 

مولا اذ ان اد مصبائی جکی زمانے یل ماہنامہ جا وردیلیٰ کے 
ایڈ یر اوراب وہ غانقاو عارفیہ سے ضسلک ہیں ۔جام ور کے ادارت 
کے دوریں؟ 2 خقی یع فی کا اس میم نوع کےکنوانع سے مو لا ناذ بیثان 
ات مصباقی صاح بک ایک جا تح ریرجام نورشارہ اگست مم ٣١٠٢‏ 
نون میں ےہول لان ک ےنت زی 0ک کے الا نوز مرک 
ا تنازغ ہنایاجار ہاے۔دہا قباس ہے : 


۳۴‌‌'۶۷ھ))))'ٴة ١١ى‏ ً 


ہہ ہر ہہ ہہ ہہ ہہ ہے ہہ ہہ ہہ ہہ گر 


حکٹج 


...۷.۱.۰.۰ 7 دن 


ک ‏ گ ۔ ۔ ‏ تہ ہہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ج ‏ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ دہ ہک رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہہ رگ 


کی ہہ ہہ ہہ ہ۔_ے۔ ےہ تہ ہہ ہہ ہہ ح گ ہہ ہہ ہہ ہگ 


رت ات ےت ا ٣۳ےے‏ ےت ےک یکر 





لن جح رک ےک رکحل رحب رم رترحد جج رنج رمچج ٣ح‏ موصت وھ ر٣ج‏ مھ فجن دص وج لع لوج جع رح رجح ر۳ھجک رت رح رحس جج و 


”یمیس دی اور یدرس صدک یکا طو یلع صیمغیب پران 
بجی بھٹوں می ںگزرچکاے جو حد افراط میں کرسلم رسالل تکا 
انرم لی سے ماد بی ےو عدأظر رپا میں غظدت نف لف صلی ارڑر 
تالی علیہ ٥لم‏ می پشھیراور انارک باعث شی ہے۔ یسوی صدی 
ہمارے لے مھاسے اور باز دید صدی ہے انس صمدری میں "ہیں اخعترال 
ڈوازن اوراغا رایت کساارام تک ساع آروظنا کے 
ساتق دانع کے نچ اتاد دا نا یکی را ہیں جااش لک ری جایےء اسیا وحوت 
2 می ں مت تو حیدجھی ساامت رے اورنظمت رسالت پ دج ی7 رف 
ےسیا سر میں مہ با ورک نے اوردضضرول 
کو پاورکران ےکی ضرورت ےک الد تعای نے فرص ای مکواویشن 
وأ لن جن سب تڑ یادم عطافر ۱ ےا یمیس ان ک ےکا ایا 
الکارکشالن رساات پ نتر فآ ے یاالیساانبات مکی ےصماوات 
کا شائہ پیا ہوددوں چی خی را سلایطرزلکے“ 


اس قساف لک کے پروپیکنڈہکیا جار ہا ےکہ خانقاہ عارفی ےلم 
خیب پرچھلاکیا ہے ۔کیے؟ کیو ںکہمولا ناذیشان ام مصبائی صاح بک جام 
ا فو کے دورادارت می اکھ گی ا ت یمیس قیمع خیب ملک اگیاے اور 
مولان یشان صاحب خانقاہ عارفی یش رج یں لہا غاناوعارفیہ نے عقیرہ 


7 
ا نیب پچ کیاے۔ 


۰-٠... 


قاریعین خوددی انداز ہوک رسک ڈی ںکہ نخانقا ہک برنا مکمرنے کے لی ےک 
سا ات یلاک یکئی سے ووھیپض الام و تا زنڑی نی 


سے 
1 ۴ۃ( 1 


تم 


خ ‏ ۔ ‏ ۔ ‏ ۔ ۔ ہد ہہ ہد ہہ ہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہں ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رر ۔ ہک کہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ح دہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ دہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 


وڈ ای تی ہے ونیک را ان غیت سیا 


ناقاومارنے رف راعۃ اضات] 7 "8۳ت 9 _ َ08 97 ئف 

او لا:تد بی یرمولا ناذ ان صاح بک ہے خانقاہکیئیں- 8 

انی ولا کی ا لت یر ےبمقید یع خیب پسی طر ں کاکوئ لہ 
ا خی بل ایک صدی سے جار یھی جن ککوٹ مک رن ےکی ای ککوششل ہے جو 
مل شون و مد ے پیر بجی ںآ جا جاے۔ 

فانفد تقولا قتا سکواس کے اق ے ہ انف لکیا الیاے۔ورتہ 
اج اختزاضات اس قباس سے پی اکر ےکیاکویشت کیاکی ہیں ان س بک 
تر زوش خوزضمون می اض یطور پہچورے۔ 

رایعاۃ فرش اگریمون پڑ سے بی تحلیمکربھی لی ںکہ اس میس 
عقیدپعرغیب م سیا رکاحملہ یت اسے خانقا دی رف مو بکر کہا ںکا 
الصاف ے؟ 

و یےتد مولا نا ذینان صاحب قبل ہک یت ری کی دوٹوںضطیں مطالم 
ٰ ہی پریددان ہوجا ےگا کہ بذکودداقتاس ہرطرح 
ا کے جم سے پاک ہہ بللہ پیٹ ری فو دتقید مھ خی بکووا جک کے ولوں میس 
راع ککرنے والی ے ذوقی رک وزلون کے یکس ل تر کا مطالد 
ا مفیدر ےگا .تا ہم ال یر کےآخمیں“ حر فآ خر کےعنوان ےکک ایا 
اخلاصہ کی ووقمام لوک وشیہات رح ہوجاتے ہیں جومزاین نکر : 
اتال سے پیر اکر نک یکوشن کرت ہیں۔اس لیے ہلا اس ت چم ای | 
خلا ےک لکررے ہیں جس یقتم سا ےآ جا ےگا۔ شف 


یدرس .سح ھع کم مس مم میم رمیج رجح ریہ رھ رجح رجھج جج رصع رمع رس رح رہم رص مھ حم رہم رع ر۳ج رمیم تح رجح رمیحع رع رمع رص مل مرح سح رحیج ہج ھت مجح رج مع ری رسس 7 


۰.۰۰... 


ہہ ہہ ہہح ح ‏ ہہ ۔ ‏ ہد ہد رہ ہد رہ رہ رہ ہہ ہر ہہ رہ جح ج ہج ہہ ہہ ہج 


: 


یت یت ات ا ا ےو وٹ ۳ک ہت تع کہ ہر 


یت کت رت سے تر ہت ےتے ےت ہ‫ںں یر 


جکخج ہر 


نہ رات راضیات إ-۔ وہر 
, ہ+ 
رف7 


”ریب کے سال می جونزاعات داختلا فات کیں ان پور 
کرنے سےمعلوم ہہوتا ےکہان میں پیش اتا فا تافشی ہیں- سا 
اوقات ید یھگ کیم خیب کے اشبات وا کار میس دواشخائ نے 
گنٹٹوںگز ردریے اض فان ک کات یاءآرڈانےج بآ تبون 
نے فی بکامع یکاہ ے اسےا بک ک تی نٹ سکیا۔ای کش سکتا 
ے ہج یق علیہ الام کے لیے لف کا مطاقًا زکارکرے وہ کا خر 
ہے اورال کے ذ من بی نعل یب کے یف ہوم میں وتی وق رآ نبھی شال 
یں اوردد نف یپا کہ جوال کے سواکسی کے لےبھ یمک خیب 
غاب وو مضران ہے اورااسں کے جن می یع خیب سے مرادوہ 
علم سے جو بالزات ہو یک خی بکا می تین ہے بخی اس طر کی 
لا میتی بھٹوں کے ماہ ری نکی اس دوری بھی طارے جع ےاں 
مقو نے کے مصرا ہہوتے ہیں :انافی وادوانت فی واد- 

عح ریب سے مراداگریلم ذ ای ہو اکا نظریے کے این 
کی ایک بڑکی تعداد سے جوا می ںکوگی کی کی سںکہ میم خاص خدا 
ےاوڑی می یاولوعا صلی یں اوراگرا مورخیدی کے عطائیعلم پریھی 
می ب کا اطلا کیا جانادرست ہو اس م۲ ںبھ یس یکوکوئیاختلاف 
نیس ےک ۔اخہیاداول یکو ہر یع دی دا ہام امورخیبیہ پراطلا ٌ ہو 
3 اس پرٹرآن وعدبیث او رآشار وروایا تکثڑزت ے موجود 
ڈیں- اب بہاں ایک سوال می ہہوتا ےک امورخید کا پینھرکلی سے 


رر ۱ كفا 
کت یٹم مم ھی ہم جھ دج رجی جج میم یجہت رج سس ہم ہہ 7مھ کم 7بح رص رھ جن جح ہج رج ہی کو یسح ریس نس یرجھ زج رھ مین جع رح تح رص یع س7 





رح ح ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہ ہہ ہہ ہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہد ہہ ہہ ہ ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ۹ ہد ہہ ہہ ا ہ۔ہ۔ہ۔ ہہ رہ ہہ ہگ 
کب ح گ۔ ‏ ۔۔ ہ ہہ ہہ ح ‏ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ دہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ رہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ۔ ہہ ہہ ہہ ۔ہ۔ ہہ دہ ہہ ہے ہہ ہہ ہرگ 





تو می اق ہک ےکم کے ای 


...ا سسدنۃ ‏ ._. ا 


یں رقمام انا وا ولا کے مکی حیشیت بلم الچی کے بالمقائل ایی 
بھی نی ںی سندر کے بالمقائل ایک قطر ےکی سے۔ ہاں ! 
ٹب راسلام جناب مج رسول انص٥لی‏ ال علیہ ونم کے پارے 
بسا اوقا تج علا ےکھت ہی ںکمہان پبرقمام امو رید رشن ہیں 
ین !ران سےآپ پک ےتوووچھی مچ یہی ک ےک ہکتب احادبیٹ 
یس ای ددایات ڈیں ین بیس مور ےکرروز اولی سے خاممت کے 
دن کتک اورمشمر تا مضرب قمام امو رآ پ می اڈ علیہ ونم پراشنے 
نک ردسے ہیں اس لیے اس دٹیاکی تام چیزو ںکا عم پ می الل 
علیہ مکوحاصسل ہے۔ابفراااس دنا کے امور کے اعتپار سے رسو لک ریم 
لعل ہل رام کیم ےہ جب کیم الیک طرف بت 
آیع ہوۓ پا تقیققت وا ق کی طر ف نظ رکرتے ہو تکاس دنا 
کے بحدیھی ای ک نی قنای دا موجود ہے پعلم رسال تک لی سض بی 
ہے۔اس ط رح حقییقت کے اختبار سے لا اسنا ری ام تکا اس 
بات پرانقاتی ےک ہب یکر مکی ال علیہ لمکا مل لم ہیک لم 
یں ے بتت یک جوف لعل اق لکرتے ہیں ہتقیققت کے اعقبارسے 
ا نکی م راوج بج لم ہی ہوئی ہے۔ یووم رسال تکویلم الچی کے 
برابرراردینے ہیں اور نہ گی ازل سے ابدتک کے تام امو ریلم 
رسماات می شائل مات ہیں- 

ایض کم پرانفاقی کے بحدعلماے اسلام کے درمیا نف 
خر و رذ ا ا کی شاز راس نے میں اختلاف ہوگ یا ینف عم 


و 


ک ۔ ‏ ۔۔ ہد ہہ ہہ ح ‏ رہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ رہ جح ج ‏ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہد ہد ہہ رہ ہہ ہ ہہ رہ ہہ ہہ ہگ 


آ اروروایا کی بیاد یراس مک میں اختلاف ہیاک شیا 





ہے اما ا تاققیال 9 ...ر٢۳‏ 
کتنا سے اور اس می کو نکون سے امورشائل ہیں عوفی :ما بد 
ار ہام پان پامقوم اس بات کےقائل ہی ںک یلم رسالت روز اول 
سے روز قیاص تک کےتمام امو رکومحیط ہے اس می ںکوکی انتا یں 
ہے لمات ےل نک الیک جماعت ن ےمم رسالت سے خنظابہات کے 
عل موس قراردیا سے بیتحش خ یوب نم کا ان کرت ہیں بح 
صرف یلم قیا مت کا ات کرت ہیںء بی قام طط ران عل سا سے 
ہیں جو تفقطور پر برنن اورائل سنت د جماععت ہیں اوران کے ان 
اختلا فا کی حیشیت ای نضرت مولا نا اح رضاخماں بر یاودکی کے 
لفطوں بیں وبی ہے جواشھاع اور ماتر یلیہ کے سجمولی اختلافا تکی 
ہے۔(دیک یھ وکی رضو :۵۳/۹۲ پیر بنرر) 
عیب کے سللے میں ا لکن ۵9ھ موقف اور جا ئ 
اختلافات کے بعد انیسومی اورییسدییں صدریی سےگنضل لح نکی 
ککتہآفر ییاں اورعقد ہکشا ئیا لم دادراک سے پالا تر ہیں ج نکی 
بروات پرمتلہ رف مممراور یتال م نکر گیا کہ لیک عو یی 
رےگکےو یت مز لت نآرق کور ئل سل ال 
زار گی اکن یس ھا از اہن کے اتآ مو 
سے جاسکت ہیں۔اس سلسلل مس ان ”ھی نکی رش بھی انوس ناک 
ےک نکا تیور یہ بننانتا ہےکہانہوں نے ذ من شی راورز پان جن مکی 
پر وانائی اس بات پرصر فکرد کیم ری مرمبت روگی فراہ 


ضص...س .سس ٥6٥س‏ ص.صسسسسسسس...._ ںا 


ک ‏ ۔ ‏ ۔ تہ ہد ہہ ہہ رہ ح ‏ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ح ہج ہں ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ ہک ہہ ہہ ہہ ں۔رں رر ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہہ ہگ 
کک ہد ہہ ہہ ہہ خ ‏ ک ہہ رہہ رہ ہہ ہہ کک ح حہ ‏ رہ رہ ہہ رہ ہہ ہہ ہہ ہر ہہ رہ رہ خ ح ‏ حہ رہہ ہہ ہر ہہ ہہ ہد ہہ ح ‏ ح ہہ ہہ ہہ ہہ رہ ہہ ہہ ہرگ 


(ھ) 





رج رو مع جج .جرح رجعد۴ججۓھ رج رھ ھ ھن عجن ھمو۔و جن رجو ت7وججھ تم سد تح تح 7 


ص اتا حیلم سےموسروداد ا رقیلہ ۳"""ە0۸+0 
ان فداکا ران رسال ت کا رو یی پت خ کن مو نہیں ہوت 
نہیں نے وسع تلم رسمال تکو ایا خاب تک الک بساادقاسنت_لم ای 
سے مساوا تکا شبہ پیدا ہو اتا ے ا یکا عقیرہ ۶ یا ہءان 
کے بے سے جوذي لکنا ہے ددم ےک راد تھالی کے پاس جتناشک تھا 
بب ول ایی فیپ رکوعا اسہتق تال کن 
سا نے شا ع رکب کن ےکی جرآت د یک : 
توحید کے پے بیس وعدت کے سو اکیا سے 

یسوی اور یو صر یکا لو ییحی غیب پران ایی 
ھنوں می ںگزر چک ے جو حدافراط می سپ کیم رسال تکا ڈانڑاظم 
لی سےمماد تی ہی تو فیا می فظدت انف لن لی اد علی ےلم 
می ٹیر اور ہارکابا حٹ شی ہیں ۔اکیدسو یں صدی ہمارے لے مھا 
اورہازدیدگی صدبی ہے۔اس صمدی میں “یں اعترال وڈوازن اور 
اخلاص بہت جات اتکی انا رد ظا رظان 
کے ٹچ ا تھادد انا یکی راہیں جال مکی چاہیے ءعامۃ کسی نکو وین 
پرقائھم رک نکی دشوت د بی چا ای دکوت جس می ںحظمتتوحیر 
بھی سلاست ر ہے اورمظمت رسمالت پپکجھی مرف نے مو عم 
فیس لاق سے یں بہ باورکمرنے اور دفسرو لکو ہاو رک ران ےکی 
ضرورت ےک الد تھی نے تو رسلا می لعل وی مکواولین و 


رھ سح تح رع مع مھ موم رح رحج رھچم رمیج رءیج جع جع رحیجع رممع حص رسعع رک رم رمعم مس رس رم لی رمع رھت وحع رمع ر۰یحع رع مع مم رحس مجح جح رص رس ےحجرمیحم میس میس جع رمحیویسن یج رحس مد رس سی 77 


یییے ی ہے( 
...سس ٹا 


۰ 


ا خر 


٦ 


ضرورت ےا 


اایماانکا رک شان رساالت 
َ 


٭+٭ 


تو 
کو بر سے ے 
س0 


إجر' 
کٹا 


رر فآ 
ین 


لم عطاف ایا 
وراس پش لکر 


0 


اج 


٭ھ+ 


ےا اس اتا 


و 


مسماداتکاشائہ پیدراہوہدووں ہی خی اسلائی طر(کمرے-0 0ت 
ایس کت کہا پر 
نےکیویق 


تکیل ای سے 


می ان ک ےل مکا 
6 


. 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
1 
. 
' 
1 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
' 
1 
' 
' 
۱ 
! 


لد بج کن ےکی 
عطافرماۓ۔_ 


کھے 
ےت تسس سیت 


وجوجووجےدٌأکھتمنوکیْ٘ووکوحوموسًکسےأاک”مووجےلعجوجویجوجوٰوڈچکڈالڈٗئ"ژکوڈوجکوےڈتوواصجچڑواھاتموکوجوجوئےوة"ٗوجّو‌مکھوتھئجڑوجوجواووہوجھوجوتووڑویأکویجالوجوٰوجواتووجوڑٰججوائمجووجوھکوکوڈتےوجعڑمعکالڈوےچجوےاکخوچےیمحون 


ن ات ہے کہ نٹ م۴ 





1 


۵ھ 


٦‏ 6م 


1